Koi shagoofa khilao boht udaas hay dil کوئی شگوفہ کھلائو     بہت اداس ہے دل

کوئی شگوفہ کھلائو     بہت اداس ہے دل

تبسموں کے خدائو       بہت اداس ہے دل

نہ گنگنائو  ہوائو           بہت اداس ہے دل

خوشئ کا نغمہ نہ گائو      بہت اداس ہے دل

تمہاری کم نگہی بے رخی نہ بن جائے۔۔۔۔۔

ذرا نظر تو ملائو         بہت اداس ہے دل

اسی طرح ابھی ترسائیں گی وہ زلفیں بھی۔۔۔

برس  بھی جائو گھٹائو     بہت اداس ہے دل

نہ چاندنئ ہے نہ ان گیسوئوں کا سایہ ہے۔۔۔

کوئی دیا ہی جلائو         بہت اداس ہے دل

چھلک ہی جائیں نہ ان انکھڑیوں کے پیمانے

جھلک نہ دل کی دکھائو     بہت اداس ہے دل

جب اک ادا کے سوا کچھ بھی دل کو یاد نہ تھا

وہ دن نہ یاد دلائو           بہت اداس ہے دل

پھوار، پھول ، مہک ، شوق ، اور  تنہائی

خود آئو ، مجھ کو بلائو    بہت اداس ہے دل

از قلم زوار حیدر شمیم

By Syeda Vaiza Zaidi

Vaiza Zaidi is a female writer who writes Urdu web novels online. She is one of the most popular and prolific writers in the Urdu literature scene. She has written over 50 novels in different genres, such as romance, thriller, comedy, and social issues. She has a large fan following who admire her for her creativity, style, and humor. She is also an active blogger who shares her views on various topics related to Urdu culture, literature, and society. She is an inspiring role model for many young and aspiring Urdu writers.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *