mujse hazaron hain tau dhond le baqi..
mujsa kahan milayga mujhse na poch…

yaar zinda sohbat baqi tau sun meray yara..
mera poch le kisi se mera mujhse na poch…

zindagi hay so guzaar li mer jata gr waqt aata …
kesi guzri kiun ker guzri ye mujhse na poch…

Dhond leti hay mujhay dunya gum nahi hua main…
nahen milta main kisi se kisi ka mujhse na poch…

Haal pochta houn tau samjhte hen koi matlab hay unse…
be matlab pochta houn kiun yeh mujhse na poch…

azaar dunya kay keh ker khuda se mangta hun dua ye…
mujhse jinhain azaar hain pohanchay unka mujhse na poch…

hazar baar kaha mene tanhai main mjhe rehny do…
hajoom se dil derta hay ab kiun woh mujhse na poch…

by Hajoom E Tanhai

مجھ سے ہزاروں ہیں تو ڈھونڈ لے باقی
مجھ سا کہاں ملے گا مجھ سے نہ پوچھ

یار زندہ صحبت باقی تو سن میرے یارا
میرا حال پوچھ لے کسی سے مجھ سے میرا نہ پوچھ

زندگی ہے سو گزار لی مر جاتا گر وقت آتا۔۔۔
کیسی گزری کیونکر گزری اب یہ مجھ سےنہ پوچھ

ڈھونڈ لیتی ہے مجھے دنیا گم نہیں ہوا میں
نہیں ملتا میں کسی ، کسی کا مجھ سے نہ پوچھ

حال پوچھتا ہوں تو سمجھتے ہیں کوئی مطلب ہے ان سے
بے مطلب پوچھتا ہوں کیوں یہ مجھ سے نہ پوچھ۔۔۔

آزار دنیا کے کہہ کر خدا سے مانگتا ہوں دعا یہ
مجھ سے جنہیں آزار ہیں پہنچے انکا مجھ سے نہ پوچھ

ہزار بار کہا میں نے تنہائی میں مجھے رہنے دو
ہجوم سے دل ڈرتا ہے اب کیوں وہ مجھ سے نا پوچھ۔

از قلم ہجوم تنہائی

By Syeda Vaiza Zaidi

Vaiza Zaidi is a female writer who writes Urdu web novels online. She is one of the most popular and prolific writers in the Urdu literature scene. She has written over 50 novels in different genres, such as romance, thriller, comedy, and social issues. She has a large fan following who admire her for her creativity, style, and humor. She is also an active blogger who shares her views on various topics related to Urdu culture, literature, and society. She is an inspiring role model for many young and aspiring Urdu writers.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *