اور کوئی صورت بھی نہیں ہے اور نہیں ضبط کا یارا بھی 

ہائے اسی نے توڑدیا دل جس نے دل سے چاہا بھی

کتنی ترقی کر گئی دنیا کر لو پیار کا سودا بھی

دل بھی خریدے جا سکتے ہیں ہاں ہوتا ہے ایسا بھی 

کچھ اپنی تقدیر کی گردش کچھ تدبیر کی خامی تھی 

پیار پہ کوئی الزام نہیں پیار برا بھی اچھا بھی 

عشق نہیں ،اچھا تو ہوس ہے جو ہے ایک حقیقت ہے 

لاکھ فسانوں پر بھاری ہے اپنی ہوس کا قصا بھی 

سیم و زر تو اپنی نظر میں ٹھہر سکے ہیں نہ ٹھہریں گے 

ہم تو ستارے توڑ کر لاتے کوئی ہمارا ہوتا بھی 

حسن نظر کا دھوکہ نکلا پیار فریب حرص و ہوس 

عقل ٹھکانے آگئی لیکن کچھ بنتا اس دل کا بھی 

آج کہیں کل اور کہیں ہے موج شمیم آوارہ 

وہ جو ہمارا ہو نہ سکا وہ ہو نہ سکے گا کسی کا بھی 

از قلم زوار حیدر شمیم 

Rating
“>> » Home » Zauq e sukhan urdu shayari » Zawwar Haider shamim poetry » aur koi soorat bhi nahin hay aur nahin zabt ka yaara bhi

By Syeda Vaiza Zaidi

Vaiza Zaidi is a female writer who writes Urdu web novels online. She is one of the most popular and prolific writers in the Urdu literature scene. She has written over 50 novels in different genres, such as romance, thriller, comedy, and social issues. She has a large fan following who admire her for her creativity, style, and humor. She is also an active blogger who shares her views on various topics related to Urdu culture, literature, and society. She is an inspiring role model for many young and aspiring Urdu writers.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *