کہاں کے شیشہ و صہبا کہاں کے پیمانے 
تری نذر سے تراشے گیے ہیں فسانے 


حقیقتوں سے ہیں دلچسپ تر کچھ افسانے 
وگرنہ جلوہ حسن اب نہیں کہ دیوانے 

خرد  سے دور ، رموز جنوں سے سے بیگانے 
خدا کی شان کہ مشہور ہیں وہ فرزانے 

پئے بغیر جو ہوش و خرد کو لوٹ نہ لیں 
مری نظر میں ٹھہرتے نہیں وہ پیمانے 

چرا کے لے گیے ایک سوزش خفی دل میں 
وہ یے تھے مرے سوز دروں کو جھٹلانے 

ابھی حرام نہ کر حسن دوستی کہ ابھی 
خدا کے فضل سے آباد ہیں صنم خانے 

ہمیں نے منہ نہ لگایا کہ سر چڑھئیں نہ کہیں
تھے ورنہ ہم سے بھی مانوس چند پیمانے 

شمیم وضع  کریں عشق کے نیے انداز 
جنوں کو کر گیے بدنام چند دیوانے  

از قلم زوار حیدر شمیم

By Syeda Vaiza Zaidi

Vaiza Zaidi is a female writer who writes Urdu web novels online. She is one of the most popular and prolific writers in the Urdu literature scene. She has written over 50 novels in different genres, such as romance, thriller, comedy, and social issues. She has a large fan following who admire her for her creativity, style, and humor. She is also an active blogger who shares her views on various topics related to Urdu culture, literature, and society. She is an inspiring role model for many young and aspiring Urdu writers.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *