بلا سے گھیر لیا اندھیروں بگولوں نے

مرے جنوں کو ہوا دی ہے چند پھولوں نے

خراب حال ہو تم بھی ، مگر نصیبوں سے

مجھے تو دن یہ دکھایا میرے اصولوں نے

بہار رنگ سمن زار ہے مری منزل

یہ بات الگ ہے کہ الجھا لیا ببولوں نے

بکھر گئی ہیں کیوں یونہی اتنی پنکھڑیاں

بھری بہار کو طعنہ دیا ہے پھولوں نے

چمن تلک تھی سب اہل چمن کی دلداریاں

قفس میں اس بندھائی ہے کچھ بگولوں نے

ہزار اصول ہوئے جذب شوق پر صدقے

ہزار نام دیے شوق کو اصولوں نے

وفا سے مضحکہ اہل جور بھی دیکھا

وفا کے نغمہ سراؤں نے دل ملولوں نے

از قلم زوار حیدر شمیم

By Syeda Vaiza Zaidi

Vaiza Zaidi is a female writer who writes Urdu web novels online. She is one of the most popular and prolific writers in the Urdu literature scene. She has written over 50 novels in different genres, such as romance, thriller, comedy, and social issues. She has a large fan following who admire her for her creativity, style, and humor. She is also an active blogger who shares her views on various topics related to Urdu culture, literature, and society. She is an inspiring role model for many young and aspiring Urdu writers.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *