Delve into the Life and Choices of the Heroine in Urdu Novel Phurteeli Heroin Episode 2

Online urdu novels, Online urdu romantic novels, Netflix Pakistan writers, Trending online novel, Trending netflix writers, Pakistani trending novel writers Vaiza zaidi, Urdu trending Pakistan, Pakistani online writers, Pakistani trending novels, top urdu novels, urdu novels pdf, hot and bold urdu novels pdf, extreme romantic urdu novels, top 10 best urdu novels, romantic novels in urdu pdf, dark romance urdu novels pdf, best pakistani novels urdu, romantic urdu novels, hot and bold urdu novels pdf, top urdu novels, extreme romantic urdu novels top 10 best urdu novels, dark romance urdu novels pdf, latest complete urdu novels, latest complete urdu novels pdf download,Online urdu novels, Online urdu romantic novels, Netflix Pakistan writers, Trending online novel, Trending netflix writers, Pakistani trending novel writers Vaiza zaidi, Urdu trending Pakistan, Pakistani online writers, Pakistani trending novels, top urdu novels, urdu novels pdf, hot and bold urdu novels pdf, extreme romantic urdu novels, top 10 best urdu novels, romantic novels in urdu pdf, dark romance urdu novels pdf, best pakistani novels urdu, romantic urdu novels, hot and bold urdu novels pdf, top urdu novels, extreme romantic urdu novels top 10 best urdu novels, dark romance urdu novels pdf, latest complete urdu novels, latest complete urdu novels pdf download,

رومانٹک ناول “ پھرتیلی ہیروئن پارٹ ۲”
اسی پاکیزہ محبت کی “تیز دھوپ “جیسی “برستی بارشوں” میں “سُوکھتے “کب عید آگئی پتا ہی نہیں چلا ، ہوش تو جہنمیلا کو جب آیا جب اسکی خالی کی سگی بہن اور اسکے باپ کی بیوی یعنی اسکی “ماں “نے اسُے بتایا کہ آج چاند رات ہے اور مریخ پہ اسکے کزن کا “ مریخ پہ درخت لگاؤ مُلک بچاؤ پراجیکٹ “ مکمل ہوگیا ہے اوراس نے وہاں سے روانگی “پکڑ “لی اور وہ کل صبح بعد نماز عید ہمارے ساتھ ہوگا جہنمیلا پہلےمُسکرائی پھر شرمائی، اور پھر گھبرائی ،جہنمیلا کے مخروطی انگلیوں والے ہاتھ حرکت میں آئے اور وہ کل عید کی تیاریوں میں جُتنے کے لئے روانہ ہوئی
اسے نا صرف اپنا گھر ، بلکہ اپنا آپ اور اپنا گاؤں بھی اپنے مریخی کزن اور عید کی خوشی میں سجانا تھا۔۔۔ اس نے سب سے پہلے “چاند “(جو اسکے کزن نے تحفے میں بھیجا تھا)کو اپنی مانگ سے نکال کے “آسمان” پہ ٹانگا تاکہ سب کو “چاند رات “کی خبر ہو سکے اسکے بعد گاؤں کے ہر گھر میں جاکر چاند مبارک کا سلام پیش کیا،
سلامتی پنہچانے کے بعد اپنے گھر والوں کے کپڑے رنگائی کرنے بیٹھ گئی ، (کپڑے رنگے گیں تو سئیے گی نا )پچھلی اگست کی طرح جنگل سے پتے لا کے مہندی تیار کی ابا کی ٹنڈ چمکائی، اماں کو مہندی لگا کے پلنگ پہ بٹھایا ، بھائیوں کی حجامت کی ،پائپ لگا کے پورا گھر بہن بھائیوں اور بھینسوں سمیت “دھویا” ابا کی بھینسوں🐂🐂 سے دودھ نکال کے انکا دہی جمایا اور لنگوٹ سی کے بھینسوں کو پہنائے شرمیلی جو تھی منگیتر کے سامنے ننگی بھینسیں کیسے آنے دیتی ؟ ☺️☺️بہنوں کی ٹوٹی ہوئی سینڈلوں کی ٹُوٹی ہوئی ہیلز کو اپنی فیوی کول جیسی کارآمد تُھوک سے جوڑا پھر گرم موسم کی مناسبت سے اپنا مخملی پنک کلرکا گہرا لال سوٹ ، ہلکے سرمئی رنگے کے گہرے ہرے دوپٹے کے ساتھ جس پہ ہلکے گہرے نیلے اودے پھول چھپے تھے استری کرکے واش روم میں لٹکایا ، اس دوران وہ اپنے کزن کی حسین یادوں اور مدہوش سرگوشیوں میں کھوئی رہی جو میسج کی صورت وقتاً فوقتاً اسکا کزن کرتا تھا “میری جہنمیلا، “کتنا حسین سما ہوگا جب “!!! بس یہیں تک سوچ کی اسکے رخسار شرم وحیا کی لالی سے ہرےہوجاتے ہیں کہ اسے اچانک آگے کا میسج” جب میں تمہارا محرمِ زار بن جاؤنگا اور تمیں میت خانے لے جانے اور کفنانے دفنانے کا حق صرف مجھے حاصل ہوگا “ یاد آجاتا ہے وہ مزید کھلکھلاتی ، اٹھلاتی ، کچن کی طرف صبح کی تیاریوں کے لئے چل دیتی ہے ۔۔۔
جاری ہے

Kesi lagi apko Phurteeli Heroin ki yeh qist ? Rate us below

Rating
“>> » Home » Urdu Novels » Phurteeli Heroin » Delve into the Life and Choices of the Heroine in Urdu Novel Phurteeli Heroin Episode 2

By Syeda Vaiza Zaidi

Vaiza Zaidi is a female writer who writes Urdu web novels online. She is one of the most popular and prolific writers in the Urdu literature scene. She has written over 50 novels in different genres, such as romance, thriller, comedy, and social issues. She has a large fan following who admire her for her creativity, style, and humor. She is also an active blogger who shares her views on various topics related to Urdu culture, literature, and society. She is an inspiring role model for many young and aspiring Urdu writers.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *