Discover the Inspiring Traits of the Heroine in Urdu Novel Phurteeli Heroin Episode 3

Online urdu novels, Online urdu romantic novels, Netflix Pakistan writers, Trending online novel, Trending netflix writers, Pakistani trending novel writers Vaiza zaidi, Urdu trending Pakistan, Pakistani online writers, Pakistani trending novels, top urdu novels, urdu novels pdf, hot and bold urdu novels pdf, extreme romantic urdu novels, top 10 best urdu novels, romantic novels in urdu pdf, dark romance urdu novels pdf, best pakistani novels urdu, romantic urdu novels, hot and bold urdu novels pdf, top urdu novels, extreme romantic urdu novels top 10 best urdu novels, dark romance urdu novels pdf, latest complete urdu novels, latest complete urdu novels pdf download,

رومانٹک ناول “پھرتیلی ہیروئن پارٹ ۳”

کُتے نے “رفع حاجت “سے فارغ ہوکہ ٹانگ “نیچی “اور منہ “اوپر”کر کے دیکھا تو دیکھتا رہ گیا ،کُتے کی زبان مزید باہر نکل آئی اور (وہ مزید “کُتا “لگنے لگا )وہ کھمبا نہیں قدرت کا ایک شاہکار تھا چھ فٹ سے نکلتا دراز قد ، گھنگریالے سنہری بال جو پسینے کے باعث ماتھے پہ سلیقے سے چپکے تھے، انڈے سے بڑی آنکھیں اور دھوپ میں جھلسا ہوا سنہرا گلابی رنگ ، پیروں میں جمی چُو کے چمکتے جوتے، جن پہ جہنمیلا کے ہاتھوں کی تیار کردہ پالش چمک رہی تھی ، جہنمیلا کا ڈیزائن کردہ گُوچی کا ٹریک سوٹ اور کاندھے پہ لٹکتا جہنمیلا ایڈیڈاس کا تیار کردہ ایڈیڈاس بیگ ( پارٹ ٹائم برانڈ ڈیزائنر بھی تھی) ، وہ خود سے لاپرواہ و بیگانہ شخص ،

دراصل کتے نے “کھمبا “سمجھ کے جس پہ “مُوتا “تھاوہ تو مریخی شہزادہ تھاکتے نے شہزادے کو دیکھ کے “بھاؤ بھاؤ “ اور شہزادے نے کُتے کو دیکھ کے “موتی چھُو “کیا اور کتا ٹیاؤں ٹیاؤں کرتا گاؤں میں انجانے شہزادے کی آمد کا اعلان کرنے روانہ ہوگیا اور شہزادہ کھوجتی نظروں سے اپنی “ جہنمیلا” کے گھر کی تلاش میں یہاں وہاں نظریں دوڑانے لگا ، عید کی بھرپور گہما گہمی میں بھی لوگ رک رک شہزادے کو ٹکٹکی باندھے اور انگلیاں کلائی سمیت منہ میں دبائے دیکھ رہے تھے آخر کو مریخی کزن نے ہمت کرکے ایک پریشان خاتون سے پوچھا “ ماں جی، میری ماں کی سگی بہن اور جہنمیلا کی ماں کے شوہر یعنی میرے “خالو “جُمّن چچا کا گھر بتا سکتی ہیں ؟ اماں جو مریخی شہزادے کے حسن کی شوخی سے مرعوب ہوکے اپنی “ لیلیٰ” کے لئے اسُے داماد منتخب کرچکی تھیں، کے “ماں “کہنے پہ اور مچل گئیں ۔۔۔ ہاں بیٹا کیوں نہیں ، وہ جو گاؤں کا سب سے چمکتا گھر ہے جہاں گاؤں کا سب سے اونچا امرود کا درخت ، جس پہ لال ہرے سیب لٹکے ہیں “ وہ ہی جہنمیلا کا گھر ہے ۔۔ جانتے ہو اس گھر کی رنگائی پُتائی بھلے جہنمیلا نے کی لیکن وہ رنگ میری “ لیلی “ نے جنگل کے پچھواڑے بھٹی لگا کے تیار کئے ہیں مریخی شہزادے نے ایک لاکھ روپے نقد ، دو سنے کے کنگن اور ایک سو بیس گز کا مریخی پلاٹ ماں جی کو بطور شکریہ پیش کیا اور شرماتا ،مسکراتا جہنمیلا کے رنگین سپنے اپنی آنکھوں میں سجائے ، اس کے “خالی مگر رومانس سے بھرپور میسجز “، “شرارت سے پُر مہندی لگی ٹنڈ “اور “بنا کچھ کئے، شرم و حیا سے لال رُخسار “اپنی نظروں میں بسائے اپنے متوقع سسرال کی جانب روانہ ہوگیا اسکے نتھنوں میں دور سے ہی جہنمیلا کے ہاتھوں لگے امرود کے درخت پہ لٹکے سیبوں کی خوشبو گُھسنے لگی اور وہ ان سیبوں کا مینگو شیک بناکر پینے کے لئے مچلتا ، بھِنکتا تیز تیز دوڑنے لگا۔۔۔۔

جاری ہے ۔۔۔

Kesi lagi apko Phurteeli Heroin ki yeh qist? Rate us below

Rating

“>> » Home » Urdu Novels » Phurteeli Heroin » Discover the Inspiring Traits of the Heroine in Urdu Novel Phurteeli Heroin Episode 3

#پھرتیلی_ہیروئن_ناول

By Syeda Vaiza Zaidi

Vaiza Zaidi is a female writer who writes Urdu web novels online. She is one of the most popular and prolific writers in the Urdu literature scene. She has written over 50 novels in different genres, such as romance, thriller, comedy, and social issues. She has a large fan following who admire her for her creativity, style, and humor. She is also an active blogger who shares her views on various topics related to Urdu culture, literature, and society. She is an inspiring role model for many young and aspiring Urdu writers.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *