Salam korea

by Vaiza Zaidi

urdu poetry,
urdu shayari,
sad poetry in urdu
love poetry in urdu
jaun elia
allama iqbal poetry
poetry in urdu 2 lines
urdu shayri
sad poetry in urdu 2 lines
ahmad faraz
ghalib shayari
attitude poetry in urdu
sad quotes in urdu
funny poetry in urdu
romantic poetry in urdu
allama iqbal shayari
best poetry in urdu
bewafa poetry
sad shayari urdu
islamic poetry in urdu
barish poetry
poetry in urdu attitude
ghalib poetry
allama iqbal poetry in urdu
attitude quotes in urdu
poetry in urdu text
deep poetry in urdu
sad poetry in urdu text
love shayari urdu
ghazal in urdu
urdu poetry in urdu text
mirza ghalib shayari
love poetry in urdu romantic
urdu shayari on life
rekhta shayari
jaun elia poetry
iqbal shayari
deep lines in urdu
sad love poetry in urdu
urdu poetry sms
best shayari in urdu
death poetry in urdu
funny shayari in urdu
dosti poetry in urdu
father quotes in urdu
birthday poetry in urdu
poetry status
eid poetry
Hajoom e tanhai poetry,
Vaiza zaidi poetry,
jaun elia shayari,
urdu poetry text copy,
attitude poetry in urdu 2 lines text,
urdu shayari in english,
shero shayari urdu,
munafiq poetry,
mirza ghalib poetry,
romantic shayari in urdu,
allama iqbal ki shayari,
heart touching poetry in urdu 2 lines sms,
poetry in urdu 2 lines attitude,
john elia sad poetry,
sad poetry sms in urdu 2 lines text messages,
john elia shayari,
2 line urdu poetry copy paste,
dukhi poetry,
heart touching quotes in urdu,
mohsin naqvi poetry,
beautiful poetry in urdu,
udas poetry,
friendship poetry in urdu,
muhabbat poetry,
urdu sher,
one line quotes in urdu,
dosti shayari urdu,
sad poetry status,
narazgi poetry,
judai poetry,
ghalib shayari in urdu,
faiz ahmad faiz shayari,
barish poetry in urdu,
urdu one line caption copy paste,
wasi shah poetry,
most romantic love poetry in urdu,
khamoshi poetry,
love poetry in urdu text,
sad poetry sms in urdu 2 lines,
sad poetry in urdu 2 lines about life,
urdu poetry status,
islamic poetry in urdu 2 lines,
jon elia poetry,
funny poetry in urdu for friends,
attitude shayari in urdu,
allama iqbal poetry in urdu for students,
Zawwar haider poetry,
mohabbat shayari urdu,
jaun elia sad poetry,
sad poetry sms,
urdu poetry written,

urdu novels,urdu novels,
urdu poetry,
urdu afsanay,
urdu statuses,
urdu shayari,
sad poetry in urdu,
love poetry in urdu,
poetry in urdu 2 lines,
urdu shayri,
sad poetry in urdu 2 lines,
ahmad faraz,
romantic poetry in urdu,
best poetry in urdu,
bewafa poetry,
sad shayari urdu,
barish poetry,
poetry in urdu text,
deep poetry in urdu,
sad poetry in urdu text,
love shayari urdu,
ghazal in urdu,
urdu poetry in urdu text,
love poetry in urdu romantic,
urdu shayari on life,
deep lines in urdu,
sad love poetry in urdu,
urdu poetry sms,
best shayari in urdu,
very sad poetry in urdu images,
novels in urdu pdf,
urdu books,
bewafa poetry in urdu,
best urdu novels,
urdu poetry text copy,
urdu shayari in english,
shero shayari urdu,
romantic shayari in urdu,
heart touching poetry in urdu 2 lines sms,
sad poetry sms in urdu 2 lines text messages,
2 line urdu poetry copy paste,
famous urdu novels,
beautiful poetry in urdu,
udas poetry,
muhabbat poetry,
urdu sher,
barish poetry in urdu,
most romantic love poetry in urdu,
khamoshi poetry,
love poetry in urdu text,
sad poetry sms in urdu 2 lines,
sad poetry in urdu 2 lines about life,
ahmed faraz poetry,
mohabbat shayari urdu,
sad poetry sms,
urdu poetry written,
love poetry in urdu romantic 2 line,
attitude poetry in urdu text,
heart touching poetry in urdu,
sad ghazal in urdu,
2 line urdu poetry romantic sms,
ahmad faraz poetry,
poetry about life in urdu,
urdu words for poetry,
urdu poetry copy paste,
urdu poetry in english,
ahmad faraz shayari,
bewafa shayari urdu,
love poetry in urdu 2 lines,
urdu ghazal poetry,
poetry in urdu 2 lines deep
sad lines in urdu,
faraz shayari,
urdu words for shayari,
urdu sad poetry sms in urdu writing,
dard poetry,
happy poetry in urdu,
urdu love poetry for her,
faraz poetry,
ali zaryoun shayari,
shayari in urdu words,
very sad shayari urdu,
ishq poetry in urdu,
urdu shayari images,
2 lines poetry,
new poetry in urdu,
urdu poetry in hindi,
urdu poetry lines,
one line poetry in urdu,
poetry on beauty in urdu,
one line poetry in urdu text,
muskurahat poetry,
sad poetry in urdu 2 lines without images,
mohabbat poetry in urdu,
nice poetry in urdu,
best love poetry in urdu,
muhabbat poetry in urdu,
best lines in urdu,
deep love poetry in urdu,
beautiful shayari in urdu,
urdu sad poetry sms,

Novel urdu adab,
urdu digests,
raja gidh,
urdu novels list,
raqs e bismil novel,
novels in urdu pdf,
urdu books,
best urdu novels,
famous urdu novels,
free urdu digest,
naseem hijazi,
best urdu novels list,
raja gidh pdf,
urdu books library,
new urdu novels,
jangloos,
list of urdu books,
urdu story books,
bano qudsia books,
pdf urdu books,
famous urdu novels list,
best pakistani novels in urdu,
urdu stories pdf,
naseem hijazi novels,
urdu novels online,
udaas naslain,
best urdu novels pdf,
latest urdu novels,
short novels in urdu,,
romantic story urdu,
urdu best books,
best urdu books to read,
pakeeza anchal online reading,
ismat chughtai books,
urdu digest novels,
urdu books online,
urdu literature books,
islamic books urdu,
udas naslain pdf,
urdu poetry books,
urdu novel online reading,
jasoosi digest,
novel novels in urdu,
urdu audio books,
top urdu novels,
romance novel best novels in urdu,
wasif ali wasif books pdf,
urdu language books pdf,
tahir javed mughal novels,
urdu digest pdf,
naseem hijazi books,
best books to read in urdu,
ashfaq ahmed books pdf,
dastak novel,
a hameed novels,
psychology books in urdu,
bano qudsia novels,
pakeeza anchal romantic novel,
pyasa sawan novel,
free urdu novels,
anchal digest novels,
raqs bismil nove,l
urdu poetry books pdf,
new novel 2021 in urdu,
urdu novels 2021,
love story novel in urdu,
urdu history books,
raja gidh read online,
jasoosi novel,
urdu love novels list,
pakistani novels in urdu,
urdu historical novels,
romance novel famous urdu novels list,
romance novel urdu novels list


urdu poetry,
urdu shayari,
sad poetry in urdu
love poetry in urdu
jaun elia
allama iqbal poetry
poetry in urdu 2 lines
urdu shayri
sad poetry in urdu 2 lines
ahmad faraz
ghalib shayari
attitude poetry in urdu
sad quotes in urdu
funny poetry in urdu
romantic poetry in urdu
allama iqbal shayari
best poetry in urdu
bewafa poetry
sad shayari urdu
islamic poetry in urdu
barish poetry
poetry in urdu attitude
ghalib poetry
allama iqbal poetry in urdu
attitude quotes in urdu
poetry in urdu text
deep poetry in urdu
sad poetry in urdu text
love shayari urdu
ghazal in urdu
urdu poetry in urdu text
mirza ghalib shayari
love poetry in urdu romantic
urdu shayari on life
rekhta shayari
jaun elia poetry
iqbal shayari
deep lines in urdu
sad love poetry in urdu
urdu poetry sms
best shayari in urdu
death poetry in urdu
funny shayari in urdu
dosti poetry in urdu
father quotes in urdu
birthday poetry in urdu
poetry status
eid poetry
Hajoom e tanhai poetry,
Vaiza zaidi poetry,
jaun elia shayari,
urdu poetry text copy,
attitude poetry in urdu 2 lines text,
urdu shayari in english,
shero shayari urdu,
munafiq poetry,
mirza ghalib poetry,
romantic shayari in urdu,
allama iqbal ki shayari,
heart touching poetry in urdu 2 lines sms,
poetry in urdu 2 lines attitude,
john elia sad poetry,
sad poetry sms in urdu 2 lines text messages,
john elia shayari,
2 line urdu poetry copy paste,
dukhi poetry,
heart touching quotes in urdu,
mohsin naqvi poetry,
beautiful poetry in urdu,
udas poetry,
friendship poetry in urdu,
muhabbat poetry,
urdu sher,
one line quotes in urdu,
dosti shayari urdu,
sad poetry status,
narazgi poetry,
judai poetry,
ghalib shayari in urdu,
faiz ahmad faiz shayari,
barish poetry in urdu,
urdu one line caption copy paste,
wasi shah poetry,
most romantic love poetry in urdu,
khamoshi poetry,
love poetry in urdu text,
sad poetry sms in urdu 2 lines,
sad poetry in urdu 2 lines about life,
urdu poetry status,
islamic poetry in urdu 2 lines,
jon elia poetry,
funny poetry in urdu for friends,
attitude shayari in urdu,
allama iqbal poetry in urdu for students,
Zawwar haider poetry,
mohabbat shayari urdu,
jaun elia sad poetry,
sad poetry sms,
urdu poetry written,

urdu novels,urdu novels,
urdu poetry,
urdu afsanay,
urdu statuses,
urdu shayari,
sad poetry in urdu,
love poetry in urdu,
poetry in urdu 2 lines,
urdu shayri,
sad poetry in urdu 2 lines,
ahmad faraz,
romantic poetry in urdu,
best poetry in urdu,
bewafa poetry,
sad shayari urdu,
barish poetry,
poetry in urdu text,
deep poetry in urdu,
sad poetry in urdu text,
love shayari urdu,
ghazal in urdu,
urdu poetry in urdu text,
love poetry in urdu romantic,
urdu shayari on life,
deep lines in urdu,
sad love poetry in urdu,
urdu poetry sms,
best shayari in urdu,
very sad poetry in urdu images,
novels in urdu pdf,
urdu books,
bewafa poetry in urdu,
best urdu novels,
urdu poetry text copy,
urdu shayari in english,
shero shayari urdu,
romantic shayari in urdu,
heart touching poetry in urdu 2 lines sms,
sad poetry sms in urdu 2 lines text messages,
2 line urdu poetry copy paste,
famous urdu novels,
beautiful poetry in urdu,
udas poetry,
muhabbat poetry,
urdu sher,
barish poetry in urdu,
most romantic love poetry in urdu,
khamoshi poetry,
love poetry in urdu text,
sad poetry sms in urdu 2 lines,
sad poetry in urdu 2 lines about life,
ahmed faraz poetry,
mohabbat shayari urdu,
sad poetry sms,
urdu poetry written,
love poetry in urdu romantic 2 line,
attitude poetry in urdu text,
heart touching poetry in urdu,
sad ghazal in urdu,
2 line urdu poetry romantic sms,
ahmad faraz poetry,
poetry about life in urdu,
urdu words for poetry,
urdu poetry copy paste,
urdu poetry in english,
ahmad faraz shayari,
bewafa shayari urdu,
love poetry in urdu 2 lines,
urdu ghazal poetry,
poetry in urdu 2 lines deep
sad lines in urdu,
faraz shayari,
urdu words for shayari,
urdu sad poetry sms in urdu writing,
dard poetry,
happy poetry in urdu,
urdu love poetry for her,
faraz poetry,
ali zaryoun shayari,
shayari in urdu words,
very sad shayari urdu,
ishq poetry in urdu,
urdu shayari images,
2 lines poetry,
new poetry in urdu,
urdu poetry in hindi,
urdu poetry lines,
one line poetry in urdu,
poetry on beauty in urdu,
one line poetry in urdu text,
muskurahat poetry,
sad poetry in urdu 2 lines without images,
mohabbat poetry in urdu,
nice poetry in urdu,
best love poetry in urdu,
muhabbat poetry in urdu,
best lines in urdu,
deep love poetry in urdu,
beautiful shayari in urdu,
urdu sad poetry sms,

novel

urdu adab,
urdu digests,
raja gidh,
urdu novels list,
raqs e bismil novel,
novels in urdu pdf,
urdu books,
best urdu novels,
famous urdu novels,
free urdu digest,
naseem hijazi,
best urdu novels list,
raja gidh pdf,
urdu books library,
new urdu novels,
jangloos,
list of urdu books,
urdu story books,
bano qudsia books,
pdf urdu books,
famous urdu novels list,
best pakistani novels in urdu,
urdu stories pdf,
naseem hijazi novels,
urdu novels online,
udaas naslain,
best urdu novels pdf,
latest urdu novels,
short novels in urdu,,
romantic story urdu,
urdu best books,
best urdu books to read,
pakeeza anchal online reading,
ismat chughtai books,
urdu digest novels,
urdu books online,
urdu literature books,
islamic books urdu,
udas naslain pdf,
urdu poetry books,
urdu novel online reading,
jasoosi digest,
novel novels in urdu,
urdu audio books,
top urdu novels,
romance novel best novels in urdu,
wasif ali wasif books pdf,
urdu language books pdf,
tahir javed mughal novels,
urdu digest pdf,
naseem hijazi books,
best books to read in urdu,
ashfaq ahmed books pdf,
dastak novel,
a hameed novels,
psychology books in urdu,
bano qudsia novels,
pakeeza anchal romantic novel,
pyasa sawan novel,
free urdu novels,
anchal digest novels,
raqs bismil nove,l
urdu poetry books pdf,
new novel 2021 in urdu,
urdu novels 2021,
love story novel in urdu,
urdu history books,
raja gidh read online,
jasoosi novel,
urdu love novels list,
pakistani novels in urdu,
urdu historical novels,
romance novel famous urdu novels list,
romance novel urdu novels list
urdu poetry,
urdu shayari,
sad poetry in urdu
love poetry in urdu
jaun elia
allama iqbal poetry
poetry in urdu 2 lines
urdu shayri
sad poetry in urdu 2 lines
ahmad faraz
ghalib shayari
attitude poetry in urdu
sad quotes in urdu
funny poetry in urdu
romantic poetry in urdu
allama iqbal shayari
best poetry in urdu
bewafa poetry
sad shayari urdu
islamic poetry in urdu
barish poetry
poetry in urdu attitude
ghalib poetry
allama iqbal poetry in urdu
attitude quotes in urdu
poetry in urdu text
deep poetry in urdu
sad poetry in urdu text
love shayari urdu
ghazal in urdu
urdu poetry in urdu text
mirza ghalib shayari
love poetry in urdu romantic
urdu shayari on life
rekhta shayari
jaun elia poetry
iqbal shayari
deep lines in urdu
sad love poetry in urdu
urdu poetry sms
best shayari in urdu
death poetry in urdu
funny shayari in urdu
dosti poetry in urdu
father quotes in urdu
birthday poetry in urdu
poetry status
eid poetry
Hajoom e tanhai poetry,
Vaiza zaidi poetry,
jaun elia shayari,
urdu poetry text copy,
attitude poetry in urdu 2 lines text,
urdu shayari in english,
shero shayari urdu,
munafiq poetry,
mirza ghalib poetry,
romantic shayari in urdu,
allama iqbal ki shayari,
heart touching poetry in urdu 2 lines sms,
poetry in urdu 2 lines attitude,
john elia sad poetry,
sad poetry sms in urdu 2 lines text messages,
john elia shayari,
2 line urdu poetry copy paste,
dukhi poetry,
heart touching quotes in urdu,
mohsin naqvi poetry,
beautiful poetry in urdu,
udas poetry,
friendship poetry in urdu,
muhabbat poetry,
urdu sher,
one line quotes in urdu,
dosti shayari urdu,
sad poetry status,
narazgi poetry,
judai poetry,
ghalib shayari in urdu,
faiz ahmad faiz shayari,
barish poetry in urdu,
urdu one line caption copy paste,
wasi shah poetry,
most romantic love poetry in urdu,
khamoshi poetry,
love poetry in urdu text,
sad poetry sms in urdu 2 lines,
sad poetry in urdu 2 lines about life,
urdu poetry status,
islamic poetry in urdu 2 lines,
jon elia poetry,
funny poetry in urdu for friends,
attitude shayari in urdu,
allama iqbal poetry in urdu for students,
Zawwar haider poetry,
mohabbat shayari urdu,
jaun elia sad poetry,
sad poetry sms,
urdu poetry written,

urdu novels,urdu novels,
urdu poetry,
urdu afsanay,
urdu statuses,
urdu shayari,
sad poetry in urdu,
love poetry in urdu,
poetry in urdu 2 lines,
urdu shayri,
sad poetry in urdu 2 lines,
ahmad faraz,
romantic poetry in urdu,
best poetry in urdu,
bewafa poetry,
sad shayari urdu,
barish poetry,
poetry in urdu text,
deep poetry in urdu,
sad poetry in urdu text,
love shayari urdu,
ghazal in urdu,
urdu poetry in urdu text,
love poetry in urdu romantic,
urdu shayari on life,
deep lines in urdu,
sad love poetry in urdu,
urdu poetry sms,
best shayari in urdu,
very sad poetry in urdu images,
novels in urdu pdf,
urdu books,
bewafa poetry in urdu,
best urdu novels,
urdu poetry text copy,
urdu shayari in english,
shero shayari urdu,
romantic shayari in urdu,
heart touching poetry in urdu 2 lines sms,
sad poetry sms in urdu 2 lines text messages,
2 line urdu poetry copy paste,
famous urdu novels,
beautiful poetry in urdu,
udas poetry,
muhabbat poetry,
urdu sher,
barish poetry in urdu,
most romantic love poetry in urdu,
khamoshi poetry,
love poetry in urdu text,
sad poetry sms in urdu 2 lines,
sad poetry in urdu 2 lines about life,
ahmed faraz poetry,
mohabbat shayari urdu,
sad poetry sms,
urdu poetry written,
love poetry in urdu romantic 2 line,
attitude poetry in urdu text,
heart touching poetry in urdu,
sad ghazal in urdu,
2 line urdu poetry romantic sms,
ahmad faraz poetry,
poetry about life in urdu,
urdu words for poetry,
urdu poetry copy paste,
urdu poetry in english,
ahmad faraz shayari,
bewafa shayari urdu,
love poetry in urdu 2 lines,
urdu ghazal poetry,
poetry in urdu 2 lines deep
sad lines in urdu,
faraz shayari,
urdu words for shayari,
urdu sad poetry sms in urdu writing,
dard poetry,
happy poetry in urdu,
urdu love poetry for her,
faraz poetry,
ali zaryoun shayari,
shayari in urdu words,
very sad shayari urdu,
ishq poetry in urdu,
urdu shayari images,
2 lines poetry,
new poetry in urdu,
urdu poetry in hindi,
urdu poetry lines,
one line poetry in urdu,
poetry on beauty in urdu,
one line poetry in urdu text,
muskurahat poetry,
sad poetry in urdu 2 lines without images,
mohabbat poetry in urdu,
nice poetry in urdu,
best love poetry in urdu,
muhabbat poetry in urdu,
best lines in urdu,
deep love poetry in urdu,
beautiful shayari in urdu,
urdu sad poetry sms,

Novel urdu adab,
urdu digests,
raja gidh,
urdu novels list,
raqs e bismil novel,
novels in urdu pdf,
urdu books,
best urdu novels,
famous urdu novels,
free urdu digest,
naseem hijazi,
best urdu novels list,
raja gidh pdf,
urdu books library,
new urdu novels,
jangloos,
list of urdu books,
urdu story books,
bano qudsia books,
pdf urdu books,
famous urdu novels list,
best pakistani novels in urdu,
urdu stories pdf,
naseem hijazi novels,
urdu novels online,
udaas naslain,
best urdu novels pdf,
latest urdu novels,
short novels in urdu,,
romantic story urdu,
urdu best books,
best urdu books to read,
pakeeza anchal online reading,
ismat chughtai books,
urdu digest novels,
urdu books online,
urdu literature books,
islamic books urdu,
udas naslain pdf,
urdu poetry books,
urdu novel online reading,
jasoosi digest,
novel novels in urdu,
urdu audio books,
top urdu novels,
romance novel best novels in urdu,
wasif ali wasif books pdf,
urdu language books pdf,
tahir javed mughal novels,
urdu digest pdf,
naseem hijazi books,
best books to read in urdu,
ashfaq ahmed books pdf,
dastak novel,
a hameed novels,
psychology books in urdu,
bano qudsia novels,
pakeeza anchal romantic novel,
pyasa sawan novel,
free urdu novels,
anchal digest novels,
raqs bismil nove,l
urdu poetry books pdf,
new novel 2021 in urdu,
urdu novels 2021,
love story novel in urdu,
urdu history books,
raja gidh read online,
jasoosi novel,
urdu love novels list,
pakistani novels in urdu,
urdu historical novels,
romance novel famous urdu novels list,
romance novel urdu novels list


urdu poetry,
urdu shayari,
sad poetry in urdu
love poetry in urdu
jaun elia
allama iqbal poetry
poetry in urdu 2 lines
urdu shayri
sad poetry in urdu 2 lines
ahmad faraz
ghalib shayari
attitude poetry in urdu
sad quotes in urdu
funny poetry in urdu
romantic poetry in urdu
allama iqbal shayari
best poetry in urdu
bewafa poetry
sad shayari urdu
islamic poetry in urdu
barish poetry
poetry in urdu attitude
ghalib poetry
allama iqbal poetry in urdu
attitude quotes in urdu
poetry in urdu text
deep poetry in urdu
sad poetry in urdu text
love shayari urdu
ghazal in urdu
urdu poetry in urdu text
mirza ghalib shayari
love poetry in urdu romantic
urdu shayari on life
rekhta shayari
jaun elia poetry
iqbal shayari
deep lines in urdu
sad love poetry in urdu
urdu poetry sms
best shayari in urdu
death poetry in urdu
funny shayari in urdu
dosti poetry in urdu
father quotes in urdu
birthday poetry in urdu
poetry status
eid poetry
Hajoom e tanhai poetry,
Vaiza zaidi poetry,
jaun elia shayari,
urdu poetry text copy,
attitude poetry in urdu 2 lines text,
urdu shayari in english,
shero shayari urdu,
munafiq poetry,
mirza ghalib poetry,
romantic shayari in urdu,
allama iqbal ki shayari,
heart touching poetry in urdu 2 lines sms,
poetry in urdu 2 lines attitude,
john elia sad poetry,
sad poetry sms in urdu 2 lines text messages,
john elia shayari,
2 line urdu poetry copy paste,
dukhi poetry,
heart touching quotes in urdu,
mohsin naqvi poetry,
beautiful poetry in urdu,
udas poetry,
friendship poetry in urdu,
muhabbat poetry,
urdu sher,
one line quotes in urdu,
dosti shayari urdu,
sad poetry status,
narazgi poetry,
judai poetry,
ghalib shayari in urdu,
faiz ahmad faiz shayari,
barish poetry in urdu,
urdu one line caption copy paste,
wasi shah poetry,
most romantic love poetry in urdu,
khamoshi poetry,
love poetry in urdu text,
sad poetry sms in urdu 2 lines,
sad poetry in urdu 2 lines about life,
urdu poetry status,
islamic poetry in urdu 2 lines,
jon elia poetry,
funny poetry in urdu for friends,
attitude shayari in urdu,
allama iqbal poetry in urdu for students,
Zawwar haider poetry,
mohabbat shayari urdu,
jaun elia sad poetry,
sad poetry sms,
urdu poetry written,

urdu novels,urdu novels,
urdu poetry,
urdu afsanay,
urdu statuses,
urdu shayari,
sad poetry in urdu,
love poetry in urdu,
poetry in urdu 2 lines,
urdu shayri,
sad poetry in urdu 2 lines,
ahmad faraz,
romantic poetry in urdu,
best poetry in urdu,
bewafa poetry,
sad shayari urdu,
barish poetry,
poetry in urdu text,
deep poetry in urdu,
sad poetry in urdu text,
love shayari urdu,
ghazal in urdu,
urdu poetry in urdu text,
love poetry in urdu romantic,
urdu shayari on life,
deep lines in urdu,
sad love poetry in urdu,
urdu poetry sms,
best shayari in urdu,
very sad poetry in urdu images,
novels in urdu pdf,
urdu books,
bewafa poetry in urdu,
best urdu novels,
urdu poetry text copy,
urdu shayari in english,
shero shayari urdu,
romantic shayari in urdu,
heart touching poetry in urdu 2 lines sms,
sad poetry sms in urdu 2 lines text messages,
2 line urdu poetry copy paste,
famous urdu novels,
beautiful poetry in urdu,
udas poetry,
muhabbat poetry,
urdu sher,
barish poetry in urdu,
most romantic love poetry in urdu,
khamoshi poetry,
love poetry in urdu text,
sad poetry sms in urdu 2 lines,
sad poetry in urdu 2 lines about life,
ahmed faraz poetry,
mohabbat shayari urdu,
sad poetry sms,
urdu poetry written,
love poetry in urdu romantic 2 line,
attitude poetry in urdu text,
heart touching poetry in urdu,
sad ghazal in urdu,
2 line urdu poetry romantic sms,
ahmad faraz poetry,
poetry about life in urdu,
urdu words for poetry,
urdu poetry copy paste,
urdu poetry in english,
ahmad faraz shayari,
bewafa shayari urdu,
love poetry in urdu 2 lines,
urdu ghazal poetry,
poetry in urdu 2 lines deep
sad lines in urdu,
faraz shayari,
urdu words for shayari,
urdu sad poetry sms in urdu writing,
dard poetry,
happy poetry in urdu,
urdu love poetry for her,
faraz poetry,
ali zaryoun shayari,
shayari in urdu words,
very sad shayari urdu,
ishq poetry in urdu,
urdu shayari images,
2 lines poetry,
new poetry in urdu,
urdu poetry in hindi,
urdu poetry lines,
one line poetry in urdu,
poetry on beauty in urdu,
one line poetry in urdu text,
muskurahat poetry,
sad poetry in urdu 2 lines without images,
mohabbat poetry in urdu,
nice poetry in urdu,
best love poetry in urdu,
muhabbat poetry in urdu,
best lines in urdu,
deep love poetry in urdu,
beautiful shayari in urdu,
urdu sad poetry sms,

novel

urdu adab,
urdu digests,
raja gidh,
urdu novels list,
raqs e bismil novel,
novels in urdu pdf,
urdu books,
best urdu novels,
famous urdu novels,
free urdu digest,
naseem hijazi,
best urdu novels list,
raja gidh pdf,
urdu books library,
new urdu novels,
jangloos,
list of urdu books,
urdu story books,
bano qudsia books,
pdf urdu books,
famous urdu novels list,
best pakistani novels in urdu,
urdu stories pdf,
naseem hijazi novels,
urdu novels online,
udaas naslain,
best urdu novels pdf,
latest urdu novels,
short novels in urdu,,
romantic story urdu,
urdu best books,
best urdu books to read,
pakeeza anchal online reading,
ismat chughtai books,
urdu digest novels,
urdu books online,
urdu literature books,
islamic books urdu,
udas naslain pdf,
urdu poetry books,
urdu novel online reading,
jasoosi digest,
novel novels in urdu,
urdu audio books,
top urdu novels,
romance novel best novels in urdu,
wasif ali wasif books pdf,
urdu language books pdf,
tahir javed mughal novels,
urdu digest pdf,
naseem hijazi books,
best books to read in urdu,
ashfaq ahmed books pdf,
dastak novel,
a hameed novels,
psychology books in urdu,
bano qudsia novels,
pakeeza anchal romantic novel,
pyasa sawan novel,
free urdu novels,
anchal digest novels,
raqs bismil nove,l
urdu poetry books pdf,
new novel 2021 in urdu,
urdu novels 2021,
love story novel in urdu,
urdu history books,
raja gidh read online,
jasoosi novel,
urdu love novels list,
pakistani novels in urdu,
urdu historical novels,
romance novel famous urdu novels list,
romance novel urdu novels list
kdrama urdu,
Desi kimchi,
Desi kdrama fans,
Urdu kdrama,
Urdu web,
Kdrama maza,
Korean masti,
korean dramas,
kdrama,
k drama,
best korean drama,
korean drama 2020,
korean drama 2021,
kdrama 2021
best kdrama,
korean series,
kdramas to watch,
korean drama website,
kdrama website,
netflix korean drama,
asian drama,
best korean drama 2020,
top korean drama,
new korean drama 2021,
best korean drama 2021,
best kdrama 2020,
best kdrama to watch,
best korean drama on netflix,
best korean series,
best kdrama 2021,
kdrama netflix,
k drama urdu,
www korean drama,
watch korean drama,
best k dramas on netflix,
netflix korean drama 2021,
best kdrama on netflix,
new korean drama,
www kdrama,
k drama 2021,
korean series on netflix,
netflix korean drama 2020,
top 10 korean drama,
top kdrama,
top korean drama 2020,
k dramas to watch,
2021 korean drama,
korean drama series,
best korean series on netflix,
new kdrama 2021,
2020 kdrama,
2020 korean drama,
2021 kdrama,
k drama netflix,
best k drama to watch,
romance kdrama,
k drama 2020,
new korean drama 2020,
latest korean drama 2021,
korean dramas to watch,
top korean drama 2021,
watch kdrama,
korean tv series,
highest rated korean drama,
korean drama in hindi,
korean drama shows,
top kdrama 2021,
new kdrama,
watch asian drama,
popular korean drama,
kdrama online,
latest korean drama,
korean drama online,
korean netflix series,
korean tv shows,
korean shows,
must watch kdrama,
korean shows on netflix,
famous korean dramas,
romance korean drama,
top kdrama 2020,
most popular korean drama,
korean series 2021,
must watch korean drama,
new kdrama 2020,
best romance kdrama,
popular kdrama,
good kdramas,
korean drama in hindi dubbed,
korean series 2020,
kdramas 2020,
best korean shows on netflix,
korean drama 2021 netflix,
top k dramas,
top rated korean drama,
watch kdrama online,
korean romance,
top korean series,
netflix k drama,
good korean dramas,
latest kdrama 2021,
most watched korean drama,
top 10 kdrama,
famous kdrama,
all in korean drama,
best k drama 2020,
urdu adab,
urdu digests,
raja gidh,
urdu novels list,
raqs e bismil novel,
novels in urdu pdf,
urdu books,
best urdu novels,
famous urdu novels,
free urdu digest,
naseem hijazi,
best urdu novels list,
raja gidh pdf,
urdu books library,
new urdu novels,
jangloos,
list of urdu books,
urdu story books,
bano qudsia books,
pdf urdu books,
famous urdu novels list,
best pakistani novels in urdu,
urdu stories pdf,
naseem hijazi novels,
urdu novels online,
udaas naslain,
best urdu novels pdf,
latest urdu novels,
short novels in urdu,,
romantic story urdu,
urdu best books,
best urdu books to read,
pakeeza anchal online reading,
ismat chughtai books,
urdu digest novels,
urdu books online,
urdu literature books,
pakeeza anchal,
l online reading,
pakeeza anchal novel online reading,
urdu novel bank,
urdu novel platform,
yaar zinda sohbat baqi,
desi story urdu,
salam korea episode 30

قسط 30

Surat No 22 : سورة الحج – Ayat No 5 

یٰۤاَیُّہَا النَّاسُ  اِنۡ  کُنۡتُمۡ فِیۡ رَیۡبٍ مِّنَ الۡبَعۡثِ فَاِنَّا خَلَقۡنٰکُمۡ مِّنۡ تُرَابٍ ثُمَّ مِنۡ نُّطۡفَۃٍ  ثُمَّ مِنۡ عَلَقَۃٍ  ثُمَّ مِنۡ مُّضۡغَۃٍ مُّخَلَّقَۃٍ  وَّ غَیۡرِ مُخَلَّقَۃٍ  لِّنُبَیِّنَ لَکُمۡ ؕ وَ نُقِرُّ  فِی الۡاَرۡحَامِ مَا نَشَآءُ  اِلٰۤی اَجَلٍ مُّسَمًّی ثُمَّ نُخۡرِجُکُمۡ طِفۡلًا ثُمَّ  لِتَبۡلُغُوۡۤا  اَشُدَّکُمۡ ۚ وَ مِنۡکُمۡ  مَّنۡ یُّتَوَفّٰی وَ مِنۡکُمۡ مَّنۡ یُّرَدُّ  اِلٰۤی  اَرۡذَلِ الۡعُمُرِ لِکَیۡلَا یَعۡلَمَ مِنۡۢ بَعۡدِ عِلۡمٍ شَیۡئًا ؕ وَ تَرَی الۡاَرۡضَ ہَامِدَۃً  فَاِذَاۤ  اَنۡزَلۡنَا عَلَیۡہَا الۡمَآءَ   اہۡتَزَّتۡ وَ  رَبَتۡ وَ  اَنۡۢبَتَتۡ مِنۡ  کُلِّ  زَوۡجٍ   ۢ  بَہِیۡجٍ ﴿۵﴾

 لوگو! اگر تمہیں مرنے کے بعد جی اٹھنے میں شک ہے تو سوچو ہم نے تمہیں مٹی سے پیدا کیا پھر نطفہ سے پھر خون بستہ سے پھر گوشت کے لوتھڑے سے جو صورت دیا گیا تھا اور وہ بے نقشہ تھا  یہ ہم تم پر ظاہر کر دیتے ہیں  اور ہم جسے چاہیں ایک ٹھہرائے ہوئے وقت تک رحم مادر میں رکھتے ہیں  پھر تمہیں 

بچپن کی حالت میں دنیا میں لاتے ہیں پھر  تاکہ تم اپنی پوری جوانی کو پہنچو ،  تم میں سے بعض تو وہ ہیں جو فوت کر لئے جاتے ہیں  اور بعض بے غرض عمر کی طرف پھر سے لوٹا دئیے جاتے ہیں کہ وہ ایک چیز سے باخبر ہونے کے بعد پھر بے خبر ہو جائے  تو دیکھتا ہے کہ زمین (  بنجر اور )  خشک ہے پھر جب ہم اس پر بارشیں برساتے ہیں تو وہ ابھرتی ہے اور پھولتی ہے اور ہر قسم کی رونق دار نباتات اگاتی ہے  ۔  

Surat No 23 : سورة المؤمنون – Ayat No 14 

ثُمَّ خَلَقۡنَا النُّطۡفَۃَ عَلَقَۃً  فَخَلَقۡنَا الۡعَلَقَۃَ مُضۡغَۃً فَخَلَقۡنَا الۡمُضۡغَۃَ عِظٰمًا فَکَسَوۡنَا الۡعِظٰمَ لَحۡمًا ٭ ثُمَّ اَنۡشَاۡنٰہُ خَلۡقًا اٰخَرَ ؕ فَتَبٰرَکَ اللّٰہُ  اَحۡسَنُ  الۡخٰلِقِیۡنَ ﴿ؕ۱۴﴾

 پھر نطفہ کو ہم نے جما ہوا خون بنا دیا پھراس خون کے لوتھڑے کو گوشت کا ٹکڑا کر دیا پھر گوشت کے ٹکڑے کو ہڈیاں بنا دیں پھر ہڈیوں کو ہم نے گوشت پہنا دیا ،   پھر دوسری بناوٹ میں اس کو پیدا کر دیا ۔   برکتوں والا ہے وہ اللہ جو سب سے بہترین پیدا کرنے والا ہے  ۔  

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

موسم صبح سے ہی ابر آلود تھا۔ آج شائد پہلی برفباری بھی متوقع تھی۔ مگر وہ موسم کی شدت سے بے نیازقبرستان میں  رچل کی قبرکے پاس گھاس پر بیٹھا تھاقبر بالکل زمین برابر تھی۔ بس کتبے لگے تھے جن پر رچل کا مکمل نام اسکا مختصر تعارف اور اسکے والدین کی جانب سے محبت کے اظہار کے طور پر چند جملے درج تھے۔ جس دن تم ہماری زندگی میں آئی تھیں خوشی کا اصل مطلب ہم نے تب جانا تھا ہم تمہارے جانے کے غم کو مسترد کرکے اسی خوشی میں جی رہے ہیں کہ ہمیں مختصر عرصے کیلئے سہی حقیقی خوشی نصیب ہوئی۔ چین سے رہو ہماری پیاری بیٹی ۔۔

یہ عبارت وہ ہمیشہ پڑھتا تھا۔ پھر بھی کبھی اکتایا نا تھا مگر آج پڑھ کر کسی کمی کا احساس ہوا اسے۔

بس۔۔ اسکا ذکر جانے جان بوجھ کر نہیں کیا تھا یا سہوا غلطی ہوگئ  وہ اسکی بیوی بھی تو تھی۔ وہ اگر لکھواتا تو کیا لکھواتا۔ 

اس نے سوچنا چاہا۔

وائس نوٹ کب کا بند ہو چکا تھا۔  

۔عبدالھادی نے اسے انسان کی پیدائش اور اسکے دوبارہ اٹھ جانے پر قرآن کا ترجمہ بھیجا تھا۔وائس نوٹ میں۔  

اس نے گہری سانس لی ائیر پوڈ کانوں سے نکال کر اپنے کوٹ کی جیب میں ڈال لیئے۔ ۔ قبرستان میں اکا دکا لوگ تھے۔ 

اس نے اپنے لائے ہوئے ٹیولپ کے گلدستےکو اسکے سرہانے رکھا تھا۔ اسکے کتبے کے ساتھ رکھے پھول۔ اس نے سر جھٹکا۔

 تو ہم انسان ایک خون کے لوتھڑے سے بنے ہیں۔ جب ایک قطرہ خون سے ہمیں ہڈیوں گوشت پوست میں ڈھالا جا سکتا ہے تو پھر چاہے ہم زمین کی گود میں گل کر مٹی ہوجائیں یا آگ میں جل کر راکھ ہو جائیں۔ جب کہیں  تھے نہیں بنا دیئے گئے تو جب ایک زندگی گزار کر ختم ہوں گے تو اس اپنے وجود کے اس زندگی میں اپنے نشان چھوڑنے والے کیسے ختم ہو سکتے ہیں۔ بس ایک کن ہوگا اور ہم سب اپنی اصل حالت میں واپس آجائیں گے۔ 

 ایک بار بے چین روتے ہوئے علی کا کندھا تھپکتے عبدالہادی نے تسلی دی تھی۔ 

او راس نے سر اٹھا کر پوچھا تھا۔ 

مجھے قیامت کے دن کا اب زندگی بھر انتظار رہے گا جب آپکی بات سچ ہوگی تو میں دیکھوں گا رچل کو 

واپس پہلے سا ہنستا مسکراتا مگر ایسا نہ ہوا تو؟ 

قیامت پر یقین ایمان کا حصہ ہے احمق۔جزبات میں بہہ کر اپنے ایمان کو متزلزل نہ کرو۔ 

انہوں نے اپنے ازلی نرم سے انداز میں گھرکا۔ 

وہ کپڑے جھاڑتا اٹھ کھڑا ہوا۔ وہ دس ہزار بار یہاں آچکا ہوگا مگر کبھی اسے رچل کی قبر دیکھ کر رچل کے وہاں موجود ہونے کا احساس نہیں ملا تھا۔

زمین کے اوپر چلتا بولتا انسان جتنا حقیقت لگتا ہے زمین کے نیچے دفن انسان خواب تخیل ہی بن کے رہ جاتا ہے۔ یوں جیسے کبھی تھا ہی نہیں۔کوئی وہم کوئی احساس بس۔ یادیں ۔ایسے انسان کی جسے دوبارہ کبھی دیکھ بھی نہ پائیں گے۔

اس نے سر اٹھا کر آسمان کے تیور دیکھے تو واپسی کا ارادہ باندھنا ہی پڑا۔ ہوا کی خنکی ایکدم بڑھ گئ تھی۔ وہ مفلر گردن پر درست کرتا ہوا آگے بڑھنے لگا کہ خیال آیا۔ واپس مڑ کر گلدستے سےایک  پھول نکال کر رچل کی قبر پر رکھا۔ پھر اپنے راستے میں آنے والی ہر قبر پر ایک ایک پھول رکھتا ہوا آگے بڑھتا رہا۔۔۔ 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

آپ لوگوں نے اچھی طرح سوچ لیا ہے؟ 

ڈاکٹرنی نے خالص پیشہ ورانہ انداز میں ان دونوں سے 

سوال کیا تھا۔ اسکی رپورٹس اسکے ہاتھ میں تھیں۔ان پر نظر دوڑاتے جتنا سرسری انداز میں پوچھا تھا اسکا مطلب یہی بنتا تھا کہ یہ صرف ایک فارمیلیٹی تھی۔۔ سنتھیا کے ہاتھ پائوں ٹھنڈے ہونے لگے۔ایڈون اسکے برابر ہی کھڑا تھا۔  ۔ایڈون نے اسکا ہاتھ ہلکے سے دبایا۔ اور مضبوط لہجے میں بولا

دے۔۔ ( ہاں) 

ٹھیک ہے آپ یہاں انتظار کیجئے۔ڈاکٹرنی نے اس سے کہا تھا اور سنتھیا کو اپنے ساتھ آنے کا اشارہ کرتی اس کمرے میں گھس گئ۔ ایک دو میڈیکل کی طالبات بھی اسکے ہمراہ تھیں۔ سنتھیا نے گھبرا کر ایڈون کو دیکھا

میں یہیں باہر انتظار کر رہا ہوں بالکل پاس ہوں تمہارے۔ بالکل گھبرانا نہیں ٹھیک ہے۔ 

ایڈون نے اسکے یخ ہوتے ہاتھ تھام کر اسکی آنکھوں میں جھانکتے تسلی دی۔ 

اس نے اثبات میں سر ہلایا۔ 

آئی لو یو۔ ایڈون کے کہنے پر وہ ہلکے سے مسکرادی

آئی لو یو ٹو۔ 

اب جائو۔ ایڈون نے کہا تو وہ سر ہلاتی اندر کمرے میں داخل ہو گئ۔ سامنے ہی بیڈ سا لگا تھا ۔ ایک نرس فورا 

اسکی مدد کو آگے بڑھی تھی۔ ڈاکٹرنی ایک بڑی سی اسکرین پر ہونے والے آپریشن کا طریقہ کار ان طالبات کو سمجھا رہی تھی۔ کچھ سلائیڈز تھیں۔ اور ایک اینیمیٹڈ ویڈیو بھی۔ 

اپنی زبان میں سمجھاتئ اس ڈاکٹرنی کی ایک بات اسکے پلے نہ پڑی تھی۔ وہ دھڑ دھڑ کرتے دل کو سنبھالتی بمشکل بیڈ پر نرس کی مدد سے دراز ہوئی۔ نرس نے سب سے پہلے اسکا بلڈ پریشر دیکھا۔ پھر تسلی آمیز انداز میں بولی

کین چھنا آگاشی۔ 

اس نے سر ہلایا۔ 

کیسی ہو لڑکی؟ ڈاکٹرنی مسکرا کر اسکے پاس آئی۔ 

ٹھیک ہوں۔ اس نے جتنے فق ہوتے چہرے کے ساتھ کہا تھا اس سے وہ ٹھیک بالکل نہیں لگی تھی۔

میرا نام ڈاکٹر رودا ہے تمہارا کیا نام ہے پیاری لڑکی۔ 

وہ شستہ انگریزئ میں اس سے باتیں کرتی ہوئی آپریشن کی تیاری کر رہی تھی

سنتھیا ۔ اسکی آواز مدہم تھی ڈاکٹرگلوز چڑھا کر ان لڑکیوں کی جانب متوجہ ہوئی۔ 

ہمیں اس آپریشن کیلئے ویڈیو کی اجازت نہیں ملی نہ ہی کسی مرد طالب علم کو اندر آنے کی اجازت ملی ہے۔ 

اور یہ تم دونوں کیلئے بے حد اچھا ہے کھل کر سوال کر سکتی ہو اور ذیادہ سے ذیادہ سیکھ سکتی ہو۔ 

وہ روانئ میں ان سے بھئ انگریزئ میں بول گئ  

بلڈ پریشر جب تک نارمل نہیں ہوگا ہم سن نہیں کریں گے ۔

میم ابھی تو ابتدائی سطح ہے اس سطح پر بچہ تو نہیں ہے نا مطلب ابھئ تو بس ذیادہ سے زیادہ دل بننا شروع ہوا ہوگا۔ 

اس طالبہ  نے سوال کیا تھا۔ سنتھیا بھی  مکمل طور پر انکی جانب متوجہ تھی۔

ڈاکٹرنئ نے آلہ سنتھیا کے پیٹ سے لگا کر انکو مانیٹر میں موجودہ شکل دکھائی  

ہم اس ابتدائئ شکل کو فیٹس کہتے ہیں۔۔ ابھی شکل تو نہیں بن پائی مگر سلسلہ تو شروع ہو چکا ہے۔ اب اندر ایک نئی زندگئ کی بنیاد پڑ چکی ہے۔یہ ایسا ہی ہے کہ آپ نے بیج بویا اس میں سے کونپل پھوٹ گئ اب اگر آپ اس بیج کو اکھاڑ پھینکیں گے تو وہ پنپنے گا نہیں اور اگر اسے بڑھنے کا موقع دیں گے تو وہ تنا ور درخت بھی بن جائے گا۔ کون جانتا مستقبل۔

ڈاکٹرنئ مکمل ہنگل میں سب تفصیل بتا رہی تھی۔

اسکا دھیان ہٹا تھا کہ نرس نے اسکو ٹیکا ٹھونک دیا 

تھا۔ وہ ایکدم سے اٹھ بیٹھی۔ 

یہ اسکرین مجھے بھئ دکھائو۔ 

اس نے بے تابی سے انگریزی میں کہا تھا۔ 

دے؟ ۔ طالبات حیرانی سے دیکھنے لگی تھیں اسے مگر ڈاکٹر نے شائد اسکا اشارہ سمجھ لیا جبھی مانیٹر کا رخ ترچھا کر کے اسکو دکھایا۔ 

یہ یہ ابھی تو کچھ بھی نہیں ہے ۔۔ ہے نا۔ 

اس نے بے تابی سے انگریزی میں پوچھا اسے تسلی درکار تھئ شائد۔  

ڈاکٹر نے اسے غور سے دیکھا۔ اسے یقینا اب اپنی بات دہرانی پڑنی  تھئ۔۔ اس نے گہری سانس لیکر اسکی آنکھوں میں جھانکا۔

یہ ابھی کچھ تو ہے سنتھیا۔۔ 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

موسم کی پہلی برفباری متوقع ہے لڑکیوں۔ پہلے ہی بتا دوں آج خوب سنبھل کر رہنا کسی بھی ایرے غیرے نتھو خیرے سے ٹکرا نا جانا نا فالتو بحث میں پڑنا۔ خاص کر شام چار بجے کے بعد۔

گوارا ناشتے کی میز پر بیٹھی پراٹھا انڈا اڑاتئ اعلان کر رہی تھی۔ اریزہ نے پراٹھا توے پر ڈالتے ہوئے حیرت سے مڑ کر پوچھا

کیوں۔۔؟؟

ایویں ڈرامے۔

ہوپ نے منہ بنا کر کافی کا مگ منہ سے لگایاوہ ایگ رول چاول اور کمچی کے ساتھ کھا رہی تھی۔ 

 گوارا نے اسکا ایک ایگ رول اچک لیا۔ 

کیونکہ یہ کوریا کی بہت پرانی ریت ہے اور میرا دل سے اس پر اعتقاد ہے کہ موسم کی پہلی برفباری میں مخالف صنف کے ساتھ ہو تو اس سے محبت ہو جاتی ہے۔ 

منہ میں ایگ رول بھرے وہ بمشکل بتا پائی۔ 

اریزہ اپنا ناشتہ لیکر انکے پاس چلی آئی۔ 

میں تو بھئی آج گھر میں ہی ہوں مگر تم دونوں اونگے بونگے لڑکوں سے نا پٹ جانا ۔ پہلی برفباری خطرناک ہوتی ہے دل والوں کیلئے۔۔ دل کہیں اٹک ہی جاتا ہے۔ 

وہ آج فل موڈ میں تھی۔ 

واقعی؟ تو پھر منع کیوں کر رہی ہو۔ اچھا ہے ہوپ کو آج کوئی اچھا سا لڑکا ٹکر جائے۔ اریزہ نے کہا تو حسب توقع ہوپ منہ بنا گئ

بکواس یے یہ۔ شمالی کوریا میں ہم پہلی برفباری کیا آخری برفباری تک برفباری میں صرف پناہ ڈھونڈتے 

ہیں محبوب نہیں۔ 

ہاں تو وہاں نا ۔یہاں کی بات کر رہی ہوں۔ 

گوارا نے سر جھٹکا۔ 

کیوں یہاں کی برف گرم ہوتی یے؟ ۔ہوپ نے تمسخر اڑایا۔

ہائش۔ گوارا نے سر پیٹ لیا جیسے

اس لڑکی میں کوئی حس چھو کر نہیں گزری۔ بھئ سیدھی بات ایک جنوبی کوریائی ذمہ دار شہری لڑکی ہونے کے ناطے بتانا میرا فرض تھا۔برفباری میں کسی اونگے بونگے سے ٹکر کر محبت نہ کر بیٹھنا ہو جاتی ہے محبت میں زندہ مثال ہوں۔اسکی۔ 

اس نے بے چاری سی شکل بنائی ۔ ہوپ اور اریزہ دونوں کھانا وانا بھول کر اسکی شکل دیکھنے لگیں۔

کیسے۔۔

 وہ مزید ترنگ میں آگئ۔ 

کرسی پیچھے کر کے لہرا لہرا کر بولی

آج سے چار بلکہ پانچ سال قبل ایک معصوم سیدھی سادی لڑکی جو چپکے چپکے اپنے سن بے کو پسند کرتی تھی اسکول سے واپسی پر اپنے راستے سڑک کنارےسر جھکائے چلتی جا رہی تھی۔۔

وہ باقائدہ اپنی آگے سے کھلی  سوئٹر کو لپیٹ کر سکڑ 

کر سر جھکائے چلی۔ اریزہ کی پشت پر آگئ تھی وہ نوالہ پلیٹ میں رکھ کر بھرپور اشتیاق سے مڑ کر دیکھنے لگی۔ 

یک نہ شد دو شد۔ 

ہوپ نے تاسف سے اس احمق کو دیکھا جو ایسے متوجہ تھی جیسے گوارا اسے ملک کے اہم راز بتانے والی ہے۔ 

تھمو ذرا۔ ہوپ نے اپنا سر خود ہی چپت مار کر بجایا

پکی نارتھ کورین ہوں میں بھی۔ یہاں بھی ملکی راز ہی مثال کے طور پر سوجھے۔ 

موسم سازش پر اترا تھا۔ پہلی برفباری متوقع تھی۔ لڑکی کو گھر جانے کی جلدی تھئ۔۔ 

ہاتھوں کے اشارے سے ڈرامہ بازی کرتی گوارا جیسے فل فارم میں تھی۔ 

پھر۔  

اریزہ کا اشتیاق دیدنی تھا۔ 

 کہ اچانک کہیں سے ایک اجنبی بندر کی شکل کا ہائی اسکولر چار لڑکوں سے بھاگتا پٹنے سے بچتا اس سے آٹکرایا۔ 

بیان۔ وہ لڑکی اسکے دھکے سے دھپ سے گھٹنوں کے بل گری۔ لڑکے کے پاس موقع تھا کہ کہہ کر دوبارہ 

چوتھا گئیر لگاکے بھاگے اور مڑ کر نہ دیکھے۔ 

مگر۔ 

گوارا نے ڈرامائئ وقفہ لیا۔ 

مگر۔۔ اریزہ کی آنکھیں بڑی ہوئیں۔۔ 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

وہ گھٹنوں کے بل گری تھی۔یون بن گرتے گرتے بچا تھا۔ اسکے چہرے پر ہوائیاں اڑی تھیں۔ اس نے تھوک نگلتے اس لڑکی سے معزرت کرکے بھاگ جانا چاہا

بیان۔ 

اسکے عجلت میں معزرت کرنے پر گھٹنا سہلا کر اٹھنے کی کوشش کرتی گوارا نے خفگی سے سر اٹھا کر گھورا

سردی سے سرخ ہوتی ناک آنکھوں میں چوٹ لگنے سے پانی اتر آیا تھا چہرے پر اڑتی آوارہ لٹیں اسکے کندھے تک آتے بالوں کی اونچی پونی ہوا سے اڑی تھی اور یون بن کے ہوش اڑے تھے۔ جی نہیں۔ اسکو دیکھ کر نہیں بلکہ لمحہ بہ لمحہ بھاگ کے قریب آتے لڑکوں کو دیکھ کر۔ 

گوارا کو اس انتہائی نازک صورتحال میں بھی سہارا دینے رکا اسکو ہاتھ پکڑ کر اٹھنے میں مدد کی اور بھاگ کھڑا ہوا مگر افسوس۔ چند قدم ہی آگے بڑھا ہوگا کہ پیچھے سے آتے چار لڑکوں نے اسے گھیر لیا تھا۔ 

دے مکا وہ لات۔ گوارا ششدر سی اسکی اپنی آنکھوں کے سامنے درگت بنتی دیکھ رہی تھی۔ اسکی ناک سے خون پھوٹا اور سڑک کنارے گزرتی پولیس وین نے آواز لگائئ۔ 

کیا کر رہے ہو تم لوگ۔ لڑکے اسکو وہیں فٹ پاتھ پر چھوڑ کر بھاگے تھے۔ وہ فٹ پاتھ پر بیٹھا اپنی چوٹیں سہلا رہا تھا جب گوارا انسانی ہمدردی کے تحت اسکے قریب آئی اور اپنا صاف ستھرا رومال اسکی جانب بڑھایایون بن نے حیرت سے دیکھا ۔مگر رومال تھام لیا

چند لمحوں میں ہی روئی کے گالے ان دونوں پر آن برسے تھے۔ 

کین چھنا؟ 

یہ گوارا نے نہیں پولیس والے نے پوچھا تھا۔ گاڑی سے اتر کر اسکے پاس آئے تھے یون بن کو سہارا دے کر کھڑا کیا اور یون بن وہیں چاروں شانے چت ہو گیا تھا۔ 

شائد گوارا بھی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

بات تو پولیس والے نے کی تھی تمہیں اس سے محبت ہونی چاہیئے تھی۔ 

ہوپ نے اسکی رومانوی کہانی کا کیا انجام کیا تھا۔ گوارا نے دانت کچکچائے۔ 

عقل کی دشمن۔ جب برف گر رہی تھی تو میں اور یون بن ایک دوسرے کو دیکھ رہے تھے۔ اور تبھی میرا سن بے والا کرش بھاپ بن کے اڑا اور یون بن کی محبت برف بن کر میرے دل پر آجمی۔ 

اس نے آہ بھر کر دل پر ہاتھ رکھا  

اریزہ واپس گھوم کر ناشتے کی طرف متوجہ ہو گئ تھی۔

بہر حال سچ کہتی ہوں اس جادوئی لمحے میں کچھ تھا پہلی برفباری کا اثر ورنہ مجھے یون بن سے تو کبھی محبت نہ ہوتی جتنا دل پھینک اور لفاظ ہے۔ 

گوارا نے سارا الزام محبت موسم کے سر ڈال کر ہاتھ جھاڑ لیئے۔ 

شکر ہے ہمارے یہاں ایسا نہیں ہوتا۔ 

اریزہ نے کندھے اچکائے۔ 

محبت نہیں ہوتی؟ گوارا حیران ہوئی

برفباری نہیں ہوتی۔۔۔ 

ہوپ نے جملہ مکمل کیا اور اٹھ کھڑی ہوئی۔ صوفے پر اسکا جیکٹ پڑا تھا وہ اٹھا کر پہننے لگئ۔ 

اریزہ نے حیران ہو کر اسکی شکل دیکھی۔ 

ہوتی ہے پاکستان میں بھی برفباری اریزہ نے خود بتایا تھا ہے نا اریزہ۔۔ 

گوارا نے کہا تو وہ جز بز سی ہو کر سر ہلانے لگی۔ 

واقعی؟ ہوپ کو یقین نہ آیا۔ خود اریزہ سے پوچھنے لگی۔ 

آ۔۔ ہاں۔ وہ گڑبڑا سی گئ۔ 

تمہیں دیکھ کر لگتا تو نہیں کہ برفباری کی عادی ہو۔۔ برفباری ہونی ہے اور تم یہ تیار ہوئی ہو۔ 

اس نے اریزہ کئ جانب اشارہ کیا جو اس وقت وولن فراک پہنے بیٹھئ تھئ۔ ساتھ اونی ہی لیگنگ تھا۔ جبکہ ہوپ ہائی نیک کے اوپر گھٹنوں تک کا بڑا سا پیرا شوٹ جیکٹ پہن رہی تھی۔ جسے دیکھ کر اسے پہلا خیال یہی آیا تھا کہ کوئی اسکو بھئ خرید سکتا ہے۔ 

ہاں اریزہ لانگ کوٹ پہن کر جانا بلکہ ایک سوئیٹر اور پہن لو۔ 

گوارا فکر مند ہوئی۔ 

اتنا گرم فراک ہے مجھے ذرا ٹھنڈ نہیں لگ رہی۔ 

اس نے اطمینان دلانا چاہا۔ 

بوائلر چل رہا احمق باہر نکل کر دیکھو تو پتہ لگے کتنی ٹھنڈ ہے  

گوارا نے ڈانٹ دیا۔ 

باہر نکلتے وقت کوٹ لے لوں گی۔۔  اس نے تسلی کرائی

کتنی دیر ہے تمہیں اور؟ 

ہوپ نے کہا تو وہ ناشتہ ختم کرتی اٹھ کھڑی ہوئی۔ 

چلو خیریت سے جائو دونوں۔ خدا تم دونوں کو اچھے لڑکے ٹکرائے آمین۔ 

گوارا نے جیسے صدق دل سے دعا دی۔ اس دعا پر اریزہ نے ہنس کر اسکو دیکھا تھا۔ ہوپ کے چہرے پر بھی کوئی بھولی بھٹکی مسکراہٹ در ہی آئی

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

وہ حسب معمول آکر اپنا اسٹال سیٹ کر رہی تھی۔ 

مینجر اسے دیکھ کر بھاگا بھاگا آیا۔ جانے کونسا بے نم کہہ رہا تھا مطلب میڈم محترمہ کہہ کر اسکا احوال انگریزی میں پوچھا۔۔ 

میں ٹھیک ہوں شکریہ۔ 

وہ کافی شرمندہ ہو رہی تھی اسکے رویئے سے۔ جوابا مینجر کی ساری انگریزی مک گئ جھک کر سلام کرتا واپس ہواپھر سینڈوچ  اور گرم کافی کا کپ اسکو بھجوا دیا۔

اس نے سینڈوچ کھول کر دیکھا تو سبزیاں اور ساتھ چکن بھی تھا اس نے احتیاط سے ایک طرف رکھ دیا۔ 

کیوں آئی ہو آج تم ؟ 

کم سن کمر پر ہاتھ رکھے کھڑا گھور رہا تھا۔ 

تاکہ تمہیں میری تنخواہ خود گھر لاکر نہ دینی پڑے۔ 

اس نے آرام سے کہا۔ کم سن اسے کھڑا گھورتا رہا۔ 

گردن ٹھیک ہوئی تمہاری؟ 

اسکے باس کو فکر بھی تھئ اسکی۔ وہ مسکرا دی

میں بالکل ٹھیک ہوں۔ ذرا سا ہی جلن ہے اب بس۔ 

اچھی بات ہے۔ اور آرام سے پانچ بجے تک چلی جانا آج برفباری کا امکان ہے۔ 

کم سن کے کہنے پر اسکے لب وا ہوئے مگر تبھی مینجر کم سن کو بلانے آیا تو وہ چپ ہی کر گئ۔ آج بھی ذیادہ تر مفت ہی کھا پی کے بچے چلے گئے سیلز کا ٹارگٹ پورا نہیں ہوا اسکا۔

چار  بجے اسکے دوسرے باس سر پر کھڑے تھے۔ 

چلو گھر چھوڑ دوں تمہیں۔ 

اسے ہنسئ آگئ۔ 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

تم لوگ پڑھ نہیں رہے ہو ؟

ہایون اسی بچوں کی اونچی والی کرسی پر بیٹھا کافی کا کپ تھامے منہ پھلائے اسے گھور رہا تھا اس نے اسکا موڈ بدلنے کی خاطر پوچھا تھا۔ 

امتحان ہو رہے ہیں۔۔ 

منہ پھلانے کے باوجود اس نے جواب دیا تھا۔

ہیں۔ اس کو شدید حیرت ہوئی ۔۔ 

کوئی فکر وکر نہیں پالتے تم لوگ امتحانوں کی؟ مزے سے نیااسٹارٹ اپ شروع کیا جا رہا ہے چھٹیاں کی جا رہی ہیں اور یہاں بیٹھ کر کافی پی جا رہی ہے۔ 

اس نے گھورا۔ 

یونیورسٹی امتحانوں کی کیا فکر؟ وہ الٹا اسے حیران ہو کر دیکھنے لگا۔ 

امتحانوں کی ہی تو فکر ہوتئ یے۔ اچھے گریڈ جی پی اے کیلیئے  پریزنٹیشنز اسائنمنٹس سب مکمل کرنی ہوتی ہیں۔ 

اس نے کہا تو وہ سر جھٹک کر بولا

ہائی اسکول تک فکریں پالی ہیں تاکہ اچھی یونیورسٹی میں داخلے کیلئے نام آجائے۔ ہائی اسکولرز یہاں کے فکریں بھی پالتے ہیں۔ فیل ہو جائیں تو خودکشی بھی کر بیٹھتے ہیں مگر تب اتنئ پریشانی اٹھانے اور ذیادہ سے زیادہ ہنر سیکھنے ،  اچھے گریڈ حاصل کرنے کا پھل یونیورسٹی کی سطح پر ملتا ہے۔ اچھا پروفائل بن چکا ہوتا ہے اچھی یونیورسٹی کی سب سہولتیں ملتی ہیں پھر راوی چین ہی چین لکھتا ہے۔۔۔ 

تم لوگوں کا کیا حساب ہے؟ اس نے برسبیل تذکرہ 

پوچھا 

ہاں۔ وہ چونکی  پھر گڑبڑا سی گئ۔ بے خیالی میں وہ اسکی تھوڑی پر پڑنے والے نیل کو ہی دیکھے گئ تھی۔ اسکے گورے چٹے چہرے پر دور سے دمک رہا تھا۔ اس کو افسوس ہونے لگا تھا  اسکی وجہ سے بے چارہ سنتھیا کے ہاتھوں پٹ گیا۔ بات تو سنی ہی نہیں۔۔ 

کیا سوچ رہی تھیں۔ 

وہ اسکی غائب دماغی پر مسکرا کر پوچھنے لگا۔

ککچھ نہیں۔ وہ کرسی پر سیدھی ہو بیٹھی۔ کافی اسکی ختم ہونے لگی تھی۔ اس نے کپ خالی کرکے میز پر ٹکایا

چلو تمہیں گھر چھوڑ دوں۔ 

ہایون اٹھ کھڑا ہوا۔ 

ابھئ وقت ہے میری چھٹی ہونے میں۔ اریزہ نے سہولت سے انکار کیا  

میں نےاس دن صرف مزاق کیا تھا۔ میں بہت سنجیدگی سے یہ نوکری کرنا چاہ رہی ہوں۔ مجھے جاننا ہے میں کتنی محنت کر سکتی ہوں مجھ میں کوئی ہنر ہے بھی یا نہیں میں نے خود مختار ہونا ہے ۔ میں اپنی محنت کی تنخواہ لیکر جانا چاہتی ہوں۔ ۔ تم دونوں اگر اسی طرح میرے ساتھ خاص الخاص والا 

برتائو کروگے تو میں خود کو کیسے آزما پائوں گی۔ 

اس نے اتنا تفصیلی جواب دیا تھا کہ ہایون چپ ہی ہوگیا۔ 

اچھا ٹھیک ہے۔ کل سے ہوجانا خود مختار مگر آج طوفان متوقع ہے۔ برفباری ہونے والی ہے اور سب سے بڑھ کر میں آگیا ہوں تمہیں لینے سو آج چلو  ۔ 

ہایون کے اصرار پر اس نے خفگی سے گھورا۔ 

وہی مرغے کی ایک ٹانگ۔ 

اس نے چڑ کر بھالو اٹھا کر اپنی جگہ رکھا۔ 

بالکل بابا لگ رہے ہو ۔ وہ بھی مجھے مرغی کی طرح پروں میں چھپا کر رکھتے رہے اور مجھ سے توقع یہ رہی کہ میں تیس مار خان بن جائوں۔ 

اسٹول سمیٹ کر رکھے اسٹال میں۔ اور پٹخ پٹخ کر ڈبے ترتیب دیئے۔ 

دو درجن لوگ میرا خیال رکھنے میرا لاڈ اٹھانے میرے گرد موجود رہیں گے تو خاک پتھر مجھ میں اعتماد آئے گا۔ پہلے دن مجھے لگا تھا کبھی اکیلے آنے جانے کی ہمت نہیں آئے گی مجھ میں مگر اتنے دنوں سے آرہی ہوں نا اکیلی۔ 

گندے پیالے ڈسپوز آف کرنے کیلئے اس نے شاپر میں سب کوڑا ڈالا ۔۔ 

واپسی پر تو خاص طور سے صبح پھر چلو ہوپ ہوتی مگر نہیں۔  کوئی مجھے تناور درخت بننے ہی نہیں دے رہا۔۔ رکھو سب بنا کے مجھے چھوئی موئئ کا پودا۔ پیراسائٹ ۔دوسروں پر انحصار کرنے والا پیراسائٹ۔ کرنے والی پیراسائٹ۔ 

اردو میں اونچا اونچابڑبڑا کر اس نے سب کام ختم کیئے تھے ۔ موبائل پرس میں رکھا کندھے پر لٹکا کے وہ جانے کو بالکل تیار ہوکر مڑی۔

انداز ایسا تھا جیسے کہہ رہی اب خوش چلو مرو  

تم اردو بولنا یاد کرتی ہو نا۔

ہایون نے کہا تو وہ ایکدم ٹھنڈی ہوئئ۔ 

ہاں۔ اس نے بلا توقف سر ہلایا۔ 

مجھے اجنبئ زبان بول بول کے تھکن ہو جاتی ہے۔ 

اس نے ناک چڑھائی۔ پھر ہنس کر بولی

مگر ایک فائدہ ہوتا ہے غصہ آنے پر جتنی بھی بڑ بڑ کرلی  سمجھ ہی نہیں آئی ہوگی تمہیں۔ 

ہایون چند لمحے اسے دیکھتا ہوا سنجیدہ ہو گیا۔ انتہائی سنجیدگی سے کہہ کر وہ مڑا

چلیں۔ 

اسکا انداز۔ وہ ٹھٹکی۔ برا مان گیا کیا یہ

وہ زیر لب بڑبڑائئ

اسے کیا لگا میں اسے گالیاں دیتئ رہی ہوں۔ 

سنو ہایون۔وہ اسکے پیچھے بھاگ کے آئی۔

گلاس ڈور کھولتے ہی سرد ترین ہوا کا جھونکا اسکی ناک سے ٹکرایا۔ہایون کے ہم قدم ہونے کے چکر میں تیز چلنے سے اسکی سانس پھول گئ ۔ چھے فٹ سے نکلتے قد والا ہایون بڑے قدم اٹھا رہا تھا۔ وہ بھاگ کے اسکے مقابل آگئ۔ ہایون ایکدم رکا 

ہایون میں تمہیں گالیاں والیاں نہیں دے رہی تھی۔میں دیتی ہی نہیں ہوں غصے میں گالیاں اور بھی کچھ برا نہیں کہہ رہی تھی تمہارے۔  

بولتے بولتے اسکی ناک پر کوئی چیز آکر گری ہایون  مڑکر اسے کچھ کہنے لگا تھا مگر وہ آنکھیں بھینگی کرکے ناک کو دیکھ رہی تھی۔ اس نے انگلی کی پور سے ناک پر سے اس روئی کے گالے کو اٹھانا چاہا تو وہ پانی کی بوند سا بن گیا۔ایک کے بعد دوسرا تیسرا 

سفید سفید روئی کے گالے ان کے گرد بارش کی طرح برس اٹھے تھے۔

وائو۔ برفباری ہے یہ تو۔ 

وہ بے طرح خوش ہوگئ تھی دونوں ہاتھ پھیلا کر اس نے برف ہتھیلیوں میں بھر لینا چاہی۔ ۔ ہایون نے گہری سانس لیکر آسمان کو دیکھا۔ 

اس موسم کی پہلی برفباری وہ اریزہ کے ساتھ دیکھنا چاہتا تھا اور قدرت نے اسکا بھرپور ساتھ دیا تھا۔ 

او خدایا۔ وہ بے طرح خوش سی برف کے گالوں کو مٹھی میں بھر رہی تھی۔ وہ ایسے خوش ہو رہی تھی جیسے پہلی بار برفباری دیکھ رہی ہو۔۔ اب تو  سڑک کنارے پر برف کی چادر بچھ جانی تھی اور

ہوا تیز تھی برفباری رک گئ۔  

بس ۔ اس کو شدید مایوسی ہوئی

ہایون ہنس دیا۔ 

اتنی سی برفباری پر اتراتے ہو تم لوگ۔ ہمارے یہاں برف سے سب ڈھک جاتا یے اتنی ہوتی ہے۔ 

وہ کمر پر ہاتھ رکھے جتا رہی تھی۔ 

راولپنڈی میں؟

ہایون نے پوچھا تو وہ گڑبڑا سی گئ۔ 

اتنی سی برفباری کو ہوا بنایا ہوا تھا ۔ جائو تم میں آرام سے ڈیوٹئ پوری کرکے چلی جائوں گی خود ہی۔ 

وہ جان کے ڈپٹ کر بولی تاکہ بات بدل جائے۔

ہایون نے سر ہلا دیا۔ 

جیسے تمہاری مرضئ۔ 

وہ کہہ کر اپنی گاڑی کی طرف بڑھا تو وہ سکھ کا سانس لیتی واپس مارٹ کی طرف مڑی

کچھ ذیادہ ہی دماغ تیز ہے اسکا ۔ سرسری سا نام بتایا تھا اپنے شہر کا ابھی تک یاد رکھے ہوئے ہے۔ اب سینٹڈ scented lake نالہ لئی  نا گوگل کرنے بیٹھ جائے۔ 

اسے خفت محسوس ہو رہی تھی۔ اور اسکا بہترین حل یہ تھا کہ اب کم از کم ہایون کی آج دوبارہ شکل نہ دیکھی جائے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ہایون نے گاڑی میں بیٹھتے ہی سب سے پہلےموبائل نکال کر  راولپنڈی کا درجہ حرارت گوگل کیا تھا۔26 ڈگری تھا۔

اس نے اگلی تلاش نالہ لئی کی ہی کی تھئ۔ 

اسکے چہرے کی ہمہ وقت چھائی رہنے والی مسکراہٹ گہری ہوتئ چلی گئ تھی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

آج موسم کی پہلی برفباری ہے۔ 

پردے کھڑکی سے ہٹاتے ہوئےنرس نےاسے اطلاع دی تھی۔ 

کچھ چاہیئے ہو تو یہ بٹن دبا دینا۔ 

ٹوٹی پھوٹئ انگریزئ میں وہ اسے سمجھاکر نکل گئ تھئ۔

وہ پرائیویٹ کمرے میں لیٹی تھی۔ اسکی ڈرپ ختم ہونے میں ایک گھنٹہ تھا۔۔۔

وہ شیشے کی کھڑکیوں سے باہر برستی سفید بارش کو خالی خالی نگاہوں سے دیکھ رہی تھی۔ 

 ایڈون بڑا سا شاپر لیئےگھبرایا ہوا داخل ہوا۔ 

کیا ہوا سب خیریت ہے نا؟ تم یہاں کیوں ہو؟ تم  ٹھیک ہو نا ؟ کوئی گھبرانے والی بات تو نہیں۔۔۔

اس نے پے در پے کئی سوال کر ڈالے۔ 

میں ٹھیک ہوں۔ 

اس نے مہین سی آواز میں کہا تھا۔ 

شکر ہے  ۔۔ یہ لو میں تمہارے لیئے گائے کے گوشت کا سوپ لایا ہوں۔ کورین بیف ہے یہ۔ کہتے ہیں یہ سب سے بہترین گوشت ہوتا ہے یہاں کا۔ 

وہ اسکے لیئےمریضوں والی  میز بیڈ کے ساتھ جوڑ رہا تھا۔پھر شاپر سے بھاپ اڑاتا کھانا نکال کر اسکے سامنے رکھنے لگا۔ وہ بمشکل بائیں ہاتھ کے بل پر زور ڈال کر اٹھنے کی کوشش کرنے لگی  

رکو۔ ایڈون نے اسکو آگے بڑھ کر سہارا دے کر بٹھایا۔ اسکی کمر میں تکیہ بھئ لگا دیا۔ اس نے طائرانہ نگاہ ڈالی میز پر کھانا سج چکا تھا۔

بھنا ہوا گوشت الگ تھا اور گوشت کاسوپ الگ۔ جس 

میں نوڈلز بھی تیر رہے تھے ساتھ سیب کے جوس کے ڈبے مکس فروٹ کا کین۔۔ 

اسے گزشتہ رات یاد آئی تو آنکھ بھر آئی۔ کتنا بد قسمت بچہ تھا یہ۔ کل اسکی ماں اسکا بوجھ اٹھاتئ بھوک سے نڈھال تھی اور آج اس اسکے سامنے طعام سجا تھا۔

کھائو۔۔ 

ایڈون نے دانستہ اسکے گالوں پر پھیل آنے والے آنسو کو نظر انداز کیا۔ 

اس نے اپنا ڈرپ والا داہنا بازو اونچا کیا۔ وہ کیسے کھانا کھا سکتی تھی جب تک ڈرپ لگی تھی۔ 

میں تمہیں اپنے ہاتھوں سے کھلاتا ہوں۔ 

ایڈون نے سمجھ کر کانٹے میں نوڈلز پروئے گوشت کا ٹکڑا پرو کر اسکی جانب بڑھایا۔ اس نے منہ کھولا تو احتیاط سے نوالہ کھلادیا ۔ 

اب چمچ میں سوپ بھر کر اسکی جانب بڑھا رہا تھا۔

اس نے سوپ بھی پی لیا مگر چباتے ہوئے اسکی آنکھوں سے مزید آنسو پھسل آئے 

بس بس رونا نہیں۔ تمہاری طبیعت خراب نہ ہو جائے اب کچھ مت سوچو کھانا کھائو اور آرام کرو ۔ میں اس روم کی بھی ادائگی کردیتا ہوں رات یہیں رکو 

صبح چلیں گے۔۔

ایڈون نے اٹھ کر اسکے سائیڈ ٹیبل سے ٹشو بکس سے کئی ٹشو نکال کر احتیاط سے آنسو پونچھے

وہ اب اسکے سب نخرے اٹھانے کو تیار تھاآخر وہ اسکی گرل فرینڈ تھی۔ہاں اپنے ناجائز بچے کی ماں کی دفعہ اسکی پروا کرنے والی طبیعت بے حسی تلے جا سوئی تھی۔۔

وہ وہئ سنتھیا تھئ۔ چند گھنٹوں میں سنتھیا بدل تو نہیں گئ تھئ یا واقعی بدل گئ تھئ؟  

وہ میز پیچھے کرتی بیڈ پر سیدھی لیٹ گئ۔

اچھا تھوڑی دیر بعد کھا لینا کھانا میں ڈاکٹر سے پوچھ کر آتا ہوں کوئی دوا وغیرہ ابھی تو بس نرس کے بتانے پر کہ تم یہاں ہو سیدھا یہاں چلا آیا۔ 

ایڈون نے زبردستئ مناسب نہ سمجھی۔ 

کوئی طاقت کا سیرپ بھی لکھوا لاتا ہوں۔ تمہیں کمزوری محسوس ہو رہی ہوگی۔ 

وہ چند لمحے رکا رہا تھا شائد وہ جوابا کچھ بولے مگر وہ بالکل خاموش کھڑکی سے پار دیکھ رہی تھی۔ وہ دروازہ بنس کرتا نکل گیا۔۔ باہر رات ہو چکی تھی اور برفباری پورے زور و شور سے جاری تھی۔ طوفان آچکا تھا بس کمرے میں اسکا شور اور ٹھنڈ محسوس نہیں 

ہو رہی تھی۔ اس نے کمبل اونچا کیا اور اسی طرف کروٹ لے لی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔  ۔۔۔ ۔۔۔

ٹارگٹ سیل کے چارٹ پر اپنی آج کی سیلز کی تعداد لکھتے اس نے آہ سی بھری تھی۔ 

آج معمول سے بھی کم لوگ تھے۔ اسکی چھٹی تک تو تقریبا سب خالی ہوچکا تھا۔

وہ پھر بھی اپنا وقت پورا کرکے ہی اٹھی۔ کوٹ کندھے پر درست کیابیگ لٹکایا خراماں خراماں چلتی باہر آئی تو بے ساختہ جھر جھری سی لیکر رہ گئ۔

اسٹور تو اتنا خنک نہیں تھا مگر باہر بلا کی سرد ہوا تھی۔سات بجے اتنی سنسانئ تھی کہ جیسے دس بج رہے ہوں۔۔اکا دکا دکانیں کھلی تھیں وہ دھیرے دھیرے قدم بڑھانے لگی بس اسٹاپ بالکل خالی تھا وہ اکیلی ہی تھی بس ۔ سرد ہوا اتنی ٹھٹھرا دینے والی تھی کہ وہ بیٹھتے بیٹھتے رک گئ۔ بس چارٹ کی ایل ای ڈی میں اسکی بس پندرہ منٹ بعد کی تھی۔ اس نے سوچا کیا کرے۔۔ سڑک پر ٹریفک معمول سے کم تھا فٹ پاتھ پر پھر ایک دو لوگ چل رہے تھے۔۔ وہ  دکانوں کے آگے پختہ سروس روڈ پر چلی آئی۔ 

میٹرو سے چلی جاتی ہوں ۔ میٹرو میں کم ازکم انتظار تک ٹھنڈ تو نہیں کھانی پڑے گی۔ 

اس نے فیصلہ لیا اور تیز تیز قدم اٹھانے لگی۔

روئی کا ٹکڑا اسکے کندھے پر آکر گرا تو اس نے چونک کر جھاڑا۔۔ ایک لانگ کوٹ اندر ہائی نیک نیچے فلیٹ اسکے باوجود سرد ہوا کپکپائے دے رہئ تھی اسے۔۔ وہ اپنے قدموں پر نگاہیں جمائے ارد گرد سے بے نیاز چلے جا رہی تھی۔۔ کورٹ شوز اسے لگ رہا تھا اس نے پہنے ہی نہیں ہیں پائوں یخ ہو رہے تھے

 اس کا برفباری میں یوں باہر اکیلے پھرنے کا پہلا تجربہ تھا۔  برف اتنی تیزی سے گر رہی تھی کہ اسکا کوٹ بھیگ چلا تھا۔۔ اس نے گھبرا کر چاروں طرف دیکھا مارکیٹ پیچھے چھٹ چکی تھی۔ ذیلی سڑک سنسان تھی اب رہائشی علاقہ شروع تھا دونوں اطراف اونچئ عمارتیں گھر بنے تھے سڑک پر اسکے سوا کوئی نہ تھا۔۔ 

اس پر شدید گھبراہٹ طاری ہونے لگی۔ برفباری خاموشی سردی سنسانی 

کیا کروں ۔۔ واپس مارکیٹ جائوں۔۔ اس نے مڑ کر دیکھا تو مارکیٹ سے اتنی دور آچکی تھی کہ وہ اسٹور نظر بھی نہیں آرہا تھا۔۔

سردی ناقابل برداشت ہوچلی تھی۔ اس نے بیگ میں فون تلاشا

تبھی بس سڑک سے گزری تھئ۔ 

شٹ ۔ وہیں رک کر انتظار کر لیتی۔ اسے خود پر غصہ آنے لگا

ٹیکسی منگوا لیتی ہوں۔ 

وہ سوچ میں پڑی۔

برف سر پر پڑ رہی تھی اسکے بال گیلے ہونے لگے تھے۔۔ 

فون دیکھتے چلتے اسے پتہ ہی نہ لگا کب فٹ پاتھ ختم ہوگیا اسکا پیر پھسلا اور وہ گھٹنے کے بل سڑک پر گری۔ تارے ناچ گئے تھے حقیقتا اسکی آنکھوں کے سامنے۔ 

امی۔ وہ وہیں گھٹنا پکڑ کر رو پڑی۔ سڑک پر پانی تھا شائد۔ وہ مکمل بھیگ گئ تھئ۔اور موبائل ۔  اس نے تڑپ کر موبائل ڈھونڈا ۔ اسکے برابر ہی پڑا تھا مگر بند ۔

اس نے بےتابئ سے اٹھایا۔ اسکا آخری سہارا ہچکی لیکر بند ہوگیا تھا۔۔ 

نہیں۔ پلیز نہیں۔  

موبائل کی منتوں پر اتر آئی مگر وہ بھی ڈھیٹ تھا آف رہا۔۔ 

سر پر گرتی برف سائیں سائیں کرتی برفانی ہوا وہ فٹ 

پاتھ پر ہتھیلی ٹکا کر اٹھنے کی کوشش کرنے لگی ۔ درد کی شدید لہر اٹھی تھی ٹانگ میں۔۔ 

وہ ٹانگ پکڑ کر دہری ہوگئ۔ 

جب  کوئی اسکے سامنے آن کھڑا ہوا۔ 

ڈاکو، چور؟ 

اس نے خوفزدہ نگاہیں اوپر اٹھا کر دیکھا

اسٹریٹ لائٹ کی مدھم روشنی میں دمکتا سفید چہرہ چندی آنکھیں اپر کا ہڈ سر پر چڑھائے وہ نامانوس شکل نہیں تھی۔ 

انسان ۔ نہیں اس وقت تو فرشتہ ہی بن کر آیا تھا۔ 

کین چھنا۔۔ 

پھر شائد اسکے اجنبئ نقوش دیکھ کر انگریزئ میں پوچھا گیا۔

آر یو آل۔رائٹ۔ 

نرمی سے پوچھا گیا۔ 

اس نے دھیرے سے نفئ میں سر ہلادیا

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

بس سے اتر کر وہ اپنی دھن میں چلتاجا رہا تھا جب اس کی نظر اس پر پڑی تھی۔ لانگ کوٹ کورٹ شوز تیز تیز قدم اٹھاتی اس لڑکی کو دیکھ کر اس کو پہلا 

خیال یہی آیا تھا 

گیلی سڑک برفباری میں اتنی پھسلن اور ہیل والا جوتا

پکا گرے گی۔ 

ابھی اتنا ہی سوچا تھا کہ اس کے سامنے وہ لڑھک گئ۔ 

اسے بے ساختہ ہنسی آئی ۔ پھر افسوس بھی ہوا 

اسے لگا تھا وہ کپڑے جھاڑتی اٹھ کھڑی ہوگی۔ 

جدید دور کی لڑکی۔ خود اٹھنے سے پہلے موبائل ٹٹول کر دیکھ رہی تھئ کہ ٹانگ بھلے ٹوٹ جائے موبائل کو کچھ نا ہو۔اسکے پاس سے گزر کر وہ سیدھا نکل آیا تھا مگر چند قدم بعد یونہی مڑ کر دیکھا تو وہ گھٹنا سہلاتی سر جھکائے وہیں بیٹھئ تھی۔ شائد اسے ذیادہ چوٹ لگ گئی ہے یہی سوچ کر وہ پلٹ آیا۔ 

آنکھوں میں آنسو بھرے سرخ آنکھیں سرخ ناک چڑھا کر اس نے گردن ہلا کر جواب دیا تھا۔ 

اس نے لمحہ بھر سوچا پھر اسکو سہارا دینے کیلئے ہاتھ بڑھایا۔ مقابل بھی اسی کے قبیل کی تھی۔ ٹھیک ٹھاک وقت لگا کر سوچ سمجھ کر اسکا ہاتھ تھام کر سہارا لیا تھا

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

پچھلی دفعہ باتھ روم دیکھا اس بار اسکے ساتھ اسکے کمرے کے بیچ کھڑی تھی۔ وہ سہارا دے کر لایا تھا۔  

اسے بیڈ پر بیٹھنے کا کہہ کر وہ الماری کی جانب بڑھ گیا۔

آپ تشریف رکھیے۔ 

اس نے ایک نظر بے داغ سفید براق بچھی چادر کو دیکھا پھر بیٹھنے کا ارادہ ترک کردیا۔ اسکے کپڑے گیلے ہو چکے تھے۔یقینا اسکا بیڈ خراب ہوجاتا۔

یہ اسپرے کر لیں گھٹنے پر اس سے فوری درد کھنچ جائے گا۔ 

اس نے ایک اسپرے کین نکال کر اسے دیا۔ 

ادھر باتھ روم ہے آپ اسے استعمال کر لیجئے گا۔

اس نے سویٹ شرٹ اور پاجامہ نکال کر بیڈ پر رکھتے ہوئے خاصی تمیز سے کہا تھا۔ 

اس نے سر ہلا کر شرٹ اٹھائئ۔ عجیب سا احساس ہوا تو پوری تہہ کھول کر دیکھی ۔پھر علی کو دیکھا۔ 

 اس نے خاصی باڈی بنا رکھی تھی۔ اسکی شرٹ اتنی چوڑی تھی کہ اس میں آرام سے دو اریزہ آجاتیں۔اسکے کپڑے اسے کہاں آئیں گے۔ 

اس کی آنکھیں اصل حجم سے دگنی ہو چلی تھیں۔۔چندی آنکھوں والے نے خاصی دلچسپی سے یہ منظر دیکھا تھا کہاں اس ملک میں حیرت کے اظہار کے طور پر بھی آنکھیں کھل نہیں پاتیں تو کہاں یہ لڑکی اپنی 

موٹی موٹی آنکھیں پھاڑ کر پانڈا بن چلی تھی۔۔۔۔

۔ 

علی اسکی نظروں کے تعاقب میں دیکھ کر وضاحت کرنے والے انداز میں بولا۔۔ 

میرے گھر کوئی خاتون نہیں ہیں۔ سو ابھی  آپ یہی پہن لیں میں آپکے کپڑے ڈرائر کردوں گا۔ 

 آپکے کپڑے بالکل بھیگ گئے تھے۔ ۔ آپ کو سردی لگ رہی ہوگی آپ یہ اٹیچ باتھ روم یوز کرلیں۔ 

اور چینج کر لیں

وہ نرمی سے کہتا باہر نکل گیا۔۔ 

 اریزہ نے جھر جھری سی لی۔۔ گھن کھا کر نہیں سردی سے۔۔ اسکو ہلکا ہلکا بخار بھی محسوس ہو رہا تھا۔  اس نے جھجکتے ہوئے کپڑے اٹھائے تبھی اسکی نگاہ بیڈ سائیڈ ٹیبل پر رکھی تصویر پر پڑی۔

تجسس کے ہاتھوں مجبور ہو کر آگے بڑھی۔ تصویر اٹھا کر دیکھنے لگی۔ علی کے ساتھ بے حد خوش شکل چندی آنکھوں والی لڑکی کا کھلکھلاتا ہوا پوز تھا۔ 

میرے گھر میں کوئی خاتون نہیں تو یہ کون ہے؟ مرد

اس نے ناک چڑھائی۔ 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

کپڑے بدل کر فریش ہوکر باہر نکلی تو کمرہ خالی۔تھا۔۔ 

اس کے کپڑے اسے بہت ڈھیلے نہیں تھے ہاں لمبے تھے ۔۔ اس نے آستینوں اور پائنچوں کو تھوڑا تھوڑا موڑ لیا تھا۔۔ اسکا مفلر بھی نم تھا۔اس نے اسپرے کیا تھا۔ درد میں نمایاں کمی آئی تھئ مگر لنگڑانا ابھی باقی تھا۔ وہ دائیں ٹانگ پر کم بوجھ ڈالتی ہوئی جھجکتی باہر نکل آئی۔۔ وہ تصویر والی باجی اگر واپس آجاتیں تو اپنے ان کے بیڈ روم میں اسے دیکھ کر کچا چبا جاتیں۔ یہی سوچ کر اس نے اسکا انتظار کرنے کی بجائے باہر آنا مناسب سمجھا۔ 

ایک کمرے اور لائونج پر مشتمل چھوٹا سا اپارٹمنٹ مختصر سامان سے سجا تھا۔ اوپن کچن میں کائونٹر پر بھاپ اڑاتا سوپ رکھا تھا ۔۔لائونج میں سامنے ہی علی کچے چاول ٹرے میں پھیلائے کارپٹ پر اکڑوں بیٹھا انہیں۔ الٹ پلٹ کر رہا تھا۔ اسے دیکھ کر ٹرے وہیں چھوڑ کر اٹھ کھڑا ہوا۔

آئیے۔۔وہ یقینا اچھا میزبان تھا۔ اسکیلئے کرسی گھسیٹ کر اسکے بیٹھنے کے بعد خود اوون کی جانب بڑھ گیا۔۔   میز پر دو پیالے دھرے تھے۔ چکن سوپ جس میں نوڈلز تیر رہے تھے۔بیف اسٹیک۔ اس نے اوون سے نکال کر گرما گرم سامنے رکھا۔۔پھر معزرت خواہانہ انداز میں بولا۔۔

معزرت میرے گھر میں پورک نہیں ہوتا ہے۔ مگر مجھے امید ہے آپکو سوپ اور اسٹیک پسند آئے گا۔۔ 

یوں بن بلائے مہمان بن کر کھانا کھانے بیٹھ جانا اسے اچھا نہیں لگ رہا تھا۔۔ 

وہ میرا خیال ہے مجھے ڈنر گھر جا کر ہی کرنا چاہیئے۔ آپکو پہلے ہی بہت زحمت دے دی ہے میں نے۔۔ 

لنچ؟ علی مسکرایا۔۔ 

آپ ڈنر کر لیں کیونکہ باہر جتنی شدید برفباری ہے آپ بریک فاسٹ ہی اب گھر پر کر سکیں گی۔۔ 

جی؟۔ اریزہ کا منہ کھلا رہ گیا۔ 

میرے پاس گاڑی نہیں ہے اور ٹیکسی آپکو اس موسم میں ملنا مشکل ہے۔ 

علی کا انداز سادہ سا تھا۔  اریزہ مرے مرے انداز میں دوبارہ بیٹھ گئ۔ 

باہر بہت موسم خراب ہے؟ اریزہ نے پوچھا تو وہ سر ہلا کر رہ گیا۔ 

اسٹیک  کا پیس کرکے چاپ اسٹکس سے اٹھاتے اسکی نظر پڑی تووہ منتظر نظروں سے ہی دیکھ رہی تھی۔ 

خراب تو نہیں کہہ سکتے معمول کی برفباری ہے مگر سڑک پر برف سے راستہ بند ہے برفباری تھمے گی تو راستہ صاف کیا جائے گا۔ آپ کھانا تو کھائیے

۔علی نے ٹوکا تو وہ گہری سانس بھر کر رہ گئ۔  بھوک کا احساس شدید تھا سو وہ مزید بحث میں پڑنے کی بجائے خاموشی سے کھانے لگی۔ 

 ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 وقفے وقفے سے وہ اریزہ کو فون کرنے کی کوشش کرتی  رہی  تھی ۔ ایسا تو پہلے کبھی نہ ہوا تھا کہ اسکا فون اتنی دیر تک بند رہے۔۔ وہ اب پریشان ہونے لگی تھی۔۔ کچھ سمجھ نہ آیا توہایون کو کال ملا دی۔ 

وہ گھر آکر چینج کرکے سکون سے بستر میں گھسا لیپ ٹاپ پر کام کر رہا تھا جب گوارا کی کال آئی۔ 

یوبو سیو۔۔

اس نے مصروف سے انداز میں فون اٹھایا۔

ہایون اریزہ تمہارے ساتھ ہے؟ 

گوارا چھوٹتے ہی بولی۔

آنی۔ ( نہیں ) کیوں کیا ہوا؟  

گوارا لمحہ بھر کو چپ ہی رہ گئ

یار وہ اسکا شام  سے کوئی اتا پتہ نہیں ہے۔ مارٹ سے تو سات بجے تک چھٹی ہو جاتئ ہے۔وہ  ابھی تک گھر نہیں آئی دس بج رہے ہیں۔ ۔۔ فون بھی بند جا رہا ہے اسکا۔۔ 

کیا؟ اور یہ تم اب بتا رہی ہو مجھے تم ۔  تو بتاتی بھی نہ مجھے؟؟؟؟۔ وہ چیخ پڑا تھا

مجھے لگا تھا تھوڑی دیر تک آجائے گی مگراب دس بجنے کو ہیں وہ ابھی تک نہیں آئی فون بھی بند جا رہا ہے۔۔ ۔۔ گوارا خائف ہو گئ تھی

اسپتالوں کی ایمرجنسئ سے پتہ کرنا تھا کوئی حادثہ نہ ہوگیا ہو۔۔

گوارا چپ ہی رہی۔۔ اسے یہ خیال نہ آیا تھا ۔۔  

ہائش۔۔ ہیونگ سک نے فون بند کردیا۔۔ چند لمحے سوچا پھر اپنا جیکٹ اٹھا کر باہر بھاگا تھا۔۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

رات کے گیارہ ہو رہے ہیں۔۔ 

فون تو کر دیتی جانے کہاں رہ گئ ہے۔ 

گوارا بے چینی سے ادھر سے ادھر چکر کاٹ رہی تھی۔ 

ہوپ بیڈ کرائون سے ٹیک لگائےکافی پی رہی تھئ۔  

فون بھئ کام نہیں کر رہا۔۔ وہ جھلا کر دھپ سے بیڈ پر بیٹھی ہوپ جو اسی وقت گھونٹ بھرنے لگی تھی گرم گرم کافی چھلک کر اسکے ہونٹ جلا گئ۔۔ 

آہش۔۔ اس نے کپ سائیڈ پر رکھ کر اپنا گریبان جھاڑا۔۔ 

پھر اسے گھورنے لگی۔ گوارا کو پہلی بار اتنا سنجیدہ اور پریشان دیکھا تھا سو غصہ دبا کر اسے سمجھانے لگی

بچی تو نہیں ہے برفباری کی وجہ سے کہیں رک گئ ہوگی۔ آجائے گئ۔۔ 

وہ یہاں کسی کو نہیں جانتی پہلی جاب تھی اسکی وہاں سے سات بجے کی۔نکلی ہے۔ابھی تک گھر نہیں آئئ۔  تم نہیں جانتی ہو وہ تو لوکل سفر بھی کرنے کی عادئ نہیں ہے۔ راستے اسکو نہیں آتے۔ جانے کہاں کس حال میں ہوگی۔ وہ تو یہاں کی زبان بھئ نہیں جانتی انجان ملک ہے اسکیلئے۔۔ 

گوارا اسکی ماں کی طرح پریشان ہو رہی تھی۔ 

پھر بھی جو لڑکی دوسرے ملک آکر رہ رہی ہے پڑھ رہی ہے وہ اتنی بے وقوف تو نہیں ہوگی۔ کہ۔۔ ہوپ کو اسکی تشویش جانے کیوں بہت بری لگی۔۔ 

تمہیں ذرا فکر نہیں ہو رہی اسکی؟ 

گوارا کو واقعی اسکی سخت دلی پر حیرت ہوئی۔۔ 

وہ بچی تھوڑی ہے۔۔۔ ہوپ نے بے نیازی سے کافی کا گھونٹ بھرا۔۔

اتنی شدید برفباری ہورہی ہے باہر مائنس میں ٹمپریچر ہے کوئی آپکے گھر کا فرد گھر سے باہر ہو اس سے رابطہ بھی نہ ہو پارہا ہو تو کیا فکر نہیں ہونی چاہیئے؟ حیرت ہے تم پر۔۔ اتنئ سخت دل کیسے ہو؟ 

گوارا نے شرمندہ کرنا چاہا جوابا وہ کھل کر ہنستی 

چلی گئ

تم جسے بتا رہی ہو اسے اپنے 5 عدد بہن بھائی ماں باپ کا کوئی اتا پتا نہیں ۔۔۔ زندہ ہیں یا مرچکے۔۔ فکر ؟؟؟؟ فکر بس ترقی یافتہ ملکوں کے پیٹ بھر کے تین وقت کھانا کھانے والے باشندوں کا مشغلہ ہے۔۔ ایسی فکریں پیٹ پالنے کی فکریں پالنے والے نہیں پالتے۔۔ وہ ایک ایک جملے پر زور دے کر بولی تھی۔ 

ہنسنے کے بعد اسکا لہجہ تیز اور تلخ ہوگیا تھا اسکے جملوں میں محسوس کی جانے والی کاٹ تھی۔ 

گوارا چپ سی ہو کر اسکی شکل دیکھتی رہی۔ 

یہ منفی 8 ڈگری یہ؟؟؟ اس نے موبائل پر موسم کی اپڈیٹ دیکھ کر طنزیہ موبائل اسکے سامنے لہرایا۔۔ 

منفی 12 ڈگری میں بس ایک سوئٹر پہن کر جب میں گھر سے نکلی تھی تو ہم چار افراد تھےماں اور ہم تین بہن بھائی۔ برف سے ڈھکی منجمد جھیل پر قدم اٹھاتے تھے تو لگتا تھا اگلا قدم جھیل سے چپکا رہ جائے گا۔۔ پیچھے گولیوں کی بوچھاڑ کرتے سرحد پر تعینات فوجی تھے تو آگے چینی افواج ہمارے قریب آنے پر ہتھکڑیاں لیئے گرفتار کرنے کو موجود تھی۔۔۔ 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔  ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

برف پوش وادی میں منجمد جھیل پر گرتے پڑتے قدم 

اٹھاتے چار نفوس نشانہ باندھنے والا بھی رک کر دیکھنے لگا تھا۔۔ 

ماں اور تین بچے جن میں دو تو شائد دس سال سے بھی کم عمر تھے ایک کو سینے سے چپکائے وہ عورت پوری قوت سے بھاگ رہی تھی جیسے اس ملک سے نکل جانے پر ایک۔خوشحال زندگی اسکی منتظر تھی۔۔ 

اس نے بندوق نیچے کر لی۔ اسکی دیکھا دیکھی اسکے ماتحت نے بھی۔۔ 

اتنی مشقت سے اس سردی میں بھاگ رہی ہے وہاں چینی انکو پکڑ کر صبح ہی واپس بھیج دیں گے۔۔ پھر جو انکا حال ہوگا اس سے بہتر ہے ابھی ہی گولی کھا کر مر جائیں۔۔

ماتحت نے اسے جو کہا یا کہنا چاہا وہ سیاق و سباق کے ساتھ روز اول سے ان سب پر عیاں تھا۔ 

مرنے والوں کیلئے دعا کی جاتی ہے گولی نہیں ماری جاتی۔۔ 

اس نے گہری سانس لیکر رخ موڑ کر بیرک کی جانب بڑھنے لگا۔۔ماتحت نے بھی تقلید کی۔۔

بیٹا مر چکا ہے اسکا۔۔ اسے پھینک دے تو بھاگنا آسان ہوجائے اسکیلئے۔۔ 

ماتحت نے یونہی تبصرہ کیا تھا۔۔ وہ مزید انکو دیکھتا 

مگر سردی بہت تھی واپسی ہی مناسب تھی۔۔

آہمونی۔۔ بھاگتے بھاگتے یو آنہ گرپڑی تھی ۔ برف پر بھاگنا آسان ہوتا ہے بھلا؟۔ مگر موت سے بھاگنا ہو تو انسان کانٹوں پر بھی بھاگ سکتاہے۔یو آنہ کی پکار پر چھوٹے بیٹے کو سینے سے لگائے بھاگتی ماں رکی بھی نہ تھی۔۔

نونا۔۔ اسکی بہن ماں سے ہاتھ چھڑاتی رک گئ۔ پلٹ کر اسکے پاس آئی۔۔ اپنے ننھے ننھے ہاتھوں سے اسکو اٹھانے کی کوشش کرتی۔۔  مینا۔

نیلے پڑے ہاتھ پھٹی فراک اور پھٹا ہوا سوئٹر۔

اسکا دل کٹ گیا۔۔ بے اختیار اس نے اسے اپنے ساتھ بھینچ لیا۔ ماں کا پرانا سوئٹر اسے اتنا کھلا تھا کہ با آسانی اسکی آٹھ سالہ بہن اس میں سما گئ۔۔ اسے ساتھ لگا کر اس نے سوئٹر کے بٹن بند کیئے۔  ماں چند قدم دور رکی گود میں لیئے ڈھائی سالہ انکے بھائی کو تکے جا رہی تھی۔ پھر جھک کر اسے برف پر لٹایا۔۔ وہ بڑی سی شال جس میں اس بچے کو لپیٹے تھے اپنے گرد پھیلا کر انہیں بلانے لگی۔۔ 

یوانہ چیخ پڑی۔۔ 

آہمونی۔ یہ کیا کیا۔۔ چھوٹے کو بخار تھا اسے برف پر لٹا دیا۔۔ 

ایکدم سے بھاگ کر اسکے پاس جانا چاہا تو بھول بیٹھی ابھی لاڈ میں بہن کو اپنے ساتھ سوئٹر میں گھسایا تھا۔۔ دونوں بری طرح الٹ کر برف پر گریں۔۔ ماں بھاگتی انکے پاس آئی۔۔ 

یوآنہ مینا ٹھیک ہو تم لوگ؟ 

ماں نے جلدی سے یوآنہ کو اٹھایا۔۔ 

لو یہ چادر تم اوڑھ لو اوراپنا سوئٹر مینا کو دے دو۔۔ 

ماں جلدی جلدی اسکا سوئٹر اتار کر مینا کو پہنانے لگی۔۔ سردی نے چوٹ کا درد بھی بھلا دیا تھا۔۔ یو آنہ ماں کی بات سنے بغیر بھائی کی جانب بھاگی۔۔ چندی آنکھوں نیلے ہونٹ والا اسکا بھائی ساکت برف پر سیدھا سیدھا لیٹا تھا۔۔ 

اس نے پیشانی چھوئی ۔۔

ماں اسکا بخار اتر گیا آہمونی۔۔ 

ماں نے بے تاثر انداز میں اسکی بہن کا ہاتھ پکڑا اور کھڑئ ہوگئ۔۔ 

یہ مر بھی گیا ہے یو آنہ۔۔ 

  ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

جھیل پار کرتے انہیں صدیاں بیتی تھیں۔۔ برفباری پھر شروع ہو گئ تھی۔۔ پلٹ پلٹ کر دیکھتئ وہ بھائی کی لاش جب تک نظر آتی رہی رک رک کر دیکھتئ رہی۔ 

پھر برف نے اسکے بھائی کی قبر بنا دی ہوگی اسکا منظر تو طوفانی ہوا اور برف کے بگولے نے دھندلا دیا تھا۔۔ 

سردی کی شدت انکیلئے اچھی ثابت ہوئی یا بری وہ فیصلہ نہ کر سکیں۔ سردی ان سے انکا بھائی چھین چکی تھی تو بارڈر پر تعینات فوجی بیرکوں میں جا گھسے تھے۔ وہ کب سرحد پار کر گئیں پتہ نہ لگا انہیں۔ چلتے چلتے تھک کر چور ہونے کے باوجود بھی وہ تینوں رکی نہ تھیں۔  نیچے چینی وادی میں بنے گھروں کی چمنیوں سے دھواں اٹھ رہا تھا۔۔ وہ بس دھوئیں کے تعاقب میں چلتی گئیں۔ صبح کی پیلی دھوپ میں وہ ایک درخت سے کمر ٹکائے سستانے بیٹھیں اور جانے کب سو گئیں۔۔ 

نامانوس سے احساس نے انہیں بیدار کیا تھا۔۔ 

آہجومہ۔۔ ایک چندی آنکھوں والا ادھیڑ عمر شخص انکی ہی زبان میں انہیں پکار رہا تھا۔۔ 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

کال بیل کی آواز نے اسکی سوچوں کا تسلسل توڑا تھا۔۔ گوارا ہیون  کو کال ملائے بیٹھئ تھی آواز پر دوڑئ دوڑی گئ دروازہ کھولنے ۔۔ سامنے یون بن  کھڑا تھا۔۔ 

خوشی تو کیا ہونی تھی اسے دیکھ کر الٹا تیوری چڑھ 

گئ۔ اسے بھی اس استقبال کا اندازہ تھا۔۔۔

کیوں آئے ہو؟ گوارا کا انداز پھاڑ کھانے والا تھا

آئی مس یو۔۔ اس نے گہری سانس بھر کر کہا تھا

وے؟ گوارا کے لیئے خاصا غیر متوقع تھا یہ اظہار۔۔

دے۔۔۔۔ اس نے آگے بڑھ کر اسے گلے لگا لیا تھا۔۔ 

یو آنہ نے سخت بد مزا سی شکل بنا کر دیکھا تھا۔۔ وہ گوارا کے پیچھے آئی تھی۔ بہر حال اتنی بھی سخت دل نہیں تھی جتنا سب سمجھ بیٹھے تھے۔۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

چائے پیوگی۔۔ 

وہ خاطر مدارت میں کوئی کسر نہیں چھوڑنا چاہ رہا تھا۔۔کھانا ختم ہوتے ہی وہ اٹھ کھڑا ہوا تھا۔

اس نے جھٹ اثبات میں سر ہلایا پھر بلا توقف نفی میں۔۔ 

بنا زبان ہلائئ سرسے جواب دیتی اریزہ کافی دلچسپ لگی تھی اسے۔۔ 

چائے پی لو سردی کم لگے گئ۔۔ 

اس نے کوریائی قہوہ ہی ہاتھ میں اٹھا رکھا تھا۔۔ 

اریزہ کی ناں ہاں میں نہ بدلی۔۔ وہ کھانسی سے مر بھی رہی ہوتی تو کھانسی کا شربت نہیں پیتی تھی کھانسی کے شربت کے ذایقے والا قہوہ چسکے لیکر پینا 

ناممکن۔۔ 

اس نے سوچ کر جھر جھری لی ۔۔ مگر چہرے پر پورا جملہ لکھا تھا۔۔اسکے۔۔ 

علی کو اسکے چہرے میں کوئی اور چہرہ دکھائی دیا۔۔ ایسا آئینے جیسا دل کے جزبات چہرے پر کوئی بھی آرام سے پڑھ لے۔۔ سب لڑکیاں ایک جیسی ہوتی ہیں یا اسکو ہی بس لڑکیوں کی یہی قسم ٹکر جاتی تھئ۔۔ 

اسے مستقل اپنی جانب دیکھتا پا کر وہ تھوڑی گڑبڑا سی گئ۔ اسکا انداز ٹھرکیاںہ نہیں تھا صاف لگ رہا تھا ذہن کہیں اور ہے۔۔ 

اس نے کھنکار کر متوجہ کرنا چاہا۔۔ 

چھوگو۔ ( مرو)  ۔۔ ( چھوگیو : ایکسکیوزمی) 

وہ فورا سنبھلا۔اور حیران ہو کر اسکی شکل دیکھنے لگا۔میں نے ایسا کیا کہا جو مرنے کا کہنے لگی۔ 

۔ دے۔۔ 

۔علی نے سوچا۔۔اسکی ہنگل اسکو ہمیشہ مشکل میں ڈالتی تھئ سو فورا خود ہی بول اٹھا۔

 وہ اگر آپکو اپنے گھر والوں کو کانٹیکٹ کرنا ہو تو لیںڈ لائن وہ رہی۔۔ اس نے شستہ انگریزئ میں کہہ کر لائونج کی جانب اشارہ کیا۔۔ 

دے۔۔ اریزہ اپنی بات بھول گئ۔ اسکے ہاتھ کے اشارے 

کے تعقب میں مڑ کر دیکھا تو چاولوں کی ٹرے پر نظر پڑی۔۔ 

پیلے چاولوں پر کالی کالی سی چیز۔۔ وہ سرعت سے اٹھی۔۔ 

وہ کالی کالی چیز مانوس سی لگ رہی تھی۔۔ 

اس نے جھپٹ کر اٹھایا تو اسکا فون تین حصوں میں بٹا پڑا تھا۔۔ فون کور اسکرین پروٹیکٹر چکنا چوراور بیچ میں فون۔۔ 

یہ۔۔ وہ روہانسی سی ہوگئ۔۔ 

گرم کھولتا پانی کپ میں ڈال کر قہوہ بناتا علی اسکے پاس ہی چلا آیا ۔ 

یہ بھیگ گیا تھا۔۔ میں نے فورا آف کردیا تھا تھوڑی دیر ڈرائر سے بھی سوکھایا ہے اب آن کرکے دیکھو انشا اللہ آن ہوجائے گا۔۔ 

پورے جملے میں اسے بس انشا اللہ سمجھ آیا تھا۔۔ 

اسکو موبائل کی پڑی تھی۔۔ 

جلدی سے  آن کیا چند لمحے آن ہو کر بند ہوگیا۔  

بیٹری ختم ہوگئ تھی۔۔ وہ وہیں کارپٹ پر بیٹھ گئ۔۔ 

علی تھوڑا سا سٹپٹا سا گیا۔۔ پہلے سوچا جانےدے پھر کہہ ہی بیٹھا۔۔

وہ آپ اس سے ہٹ کر یہاں بیٹھ جائیں۔۔

اسکے اشارہ کرکے کہنے پر اس نے مڑ کر دیکھا۔ وہ موٹا سا رگ تھا مگر تھوڑا سا مختلف۔اس پر مسجد بنی تھی۔۔ 

یہ تو جاء نماز ہے۔۔ ۔ وہ فورا اٹھ کھڑی ہوئی۔۔ 

دے؟۔ علی کو اسکی زبان نہ سمجھ آئی۔  

بیان۔۔ ۔۔ اس نے سوری کہہ دیا۔۔ 

کوئی بات نہیں۔ آپ نے اگر کسی کو اپنی خیریت کی اطلاع دینی ہے تو دے دیں۔۔

علی نے کہا تو وہ الجھن بھرے انداز میں دیکھنے لگی۔  

فارنرز کے لیئے یہاں کے لوگ کافی مشکوک رہتے ہیں خاص کر اگر آپ ہاسٹل یا اپارٹمنٹ کرائے پر لیکر رہیں۔ اگر آپکو اپنی مالک مکان کو گھر والوں  یا کسی دوست کو اطلاع دینی ہے تو یہ لینڈ لائن استعمال کر لیں

اس نے تفصیل سے دہرایا۔۔تو وہ چپ رہ گئ

میرے لیئے یہاں کون پریشان ہوگا۔ اس نے سوچا۔  

گوارا۔ 

اسکے دماغ کی بتی روشن ہوئی۔ 

مگر اس سے رابطہ کیسے کروں فون نمبر تو سب فون میں ہیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

آپ پریشان نہ ہوں تھوڑا سا صبر سے کام لیں۔۔ہم نے پٹرولنگ کو مطلع کر دیا ہے کسی بھی علاقے سے کوئی اطلاع ملتی ہے تو ہم آپکو مطلع کر دیں گے۔۔ 

وہ اس وقت پولیس اسٹیشن میں بیٹھا تھا ۔آفیسر نے اسکی درخواست پر فوری کام کیا تھا۔۔ اب تسلی دے رہا تھا۔۔

آپ دیکھیں باہر کتنی شدید برفباری ہے۔ وہ ایک غیرملکی ہے یہاں کے راستے زبان یکسر اجنبی ہیں اسکیلئے وہ اس برفباری میں بھٹک نہ رہی ہو آپ اسے ڈھونڈیے 

دیکھیں ہم نے ہاسپٹلز میں اطلاع دے دی ہے ایمرجنسی میں فی الحال آپکی بتائی گئ معلومات کے مطابق ایسی کوئی غیر ملکی لڑکی نہیں آئی ہے۔ اور برفباری شدید ہے ایسے میں یقینی طور پر کسی ریستوران ہوٹل یا سرائے میں پناہ لے رکھی ہوگئ ایسے موسم میں رعائیت کر دیتے ہیں خاص کر غیر ملکیوں کے ساتھ۔ آپ اتنے فکر مند نہ ہوں۔

لب لباب یہ تھا خدارا ہوش کے ناخن لو سر نہ کھائو

آپ نے سیل فون سے ٹریس کی لوکیشن؟؟؟ 

اس نے بے تابئ سے سوال کیا۔  

سیل فون آف ہے آخری بار جس ٹاورسے سگنل ملے ہیں 

وہ مین کنگنم ہے ۔۔ یہاں سے رہائشی علاقہ قریب ہے۔ یقینا انہوں نے اسی علاقے میں کہیں کسی گھر میں پناہ لے لی ہوگی برف۔۔۔ 

اسکا جملہ مکمل ہونے سے پہلے بجلی کی تیزی سے ہیونگ سک نے اپنا موبائل اور چابی اٹھائی تھی اور باہر بھاگا تھا۔۔ 

آفیسر ہکا بکا دیکھتا رہا۔۔ 

اب اتنی برفباری میں نکلا ہے ایک اور ایکسنڈنٹ کی رپورٹ تیار کرنی پڑ جانی ہے ہمیں۔۔ 

وہ بڑ بڑا کر رہ گیا۔۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

علی نے اپنا موبائل چارجنگ سے نکال کر چارجر میں اسکا موبائل لگا دیا تھا۔۔ 

 گونو وویو۔۔ 

اس نے شکریہ ادا کیا تو علی ہنس پڑا۔  

گومو وویو۔۔ 

اس نے کوریائی لہجے میں دہرایا۔۔ جوابا اریزہ نے تھوڑا سا برا مانتے ہوئے بالکل صحیح انداز میں لہجے کی نقل کی۔۔ 

واہ۔۔ تمہارا لہجہ کافی  رواں ہے۔۔ فارنرز کیلئے صحیح ادائیگی مشکل کام ہوتا ہے۔۔۔ علی جانے سچ مچ متاثر 

ہوا تھا یا یونہی بات بڑھانے کو لگا ہوا تھا۔۔

آپکی انگریزی رواں ہے ورنہ یہاں کے لوگوں کا لہجہ پینڈو سا ہوتا یے۔۔ 

وہ بھی روانی میں کہہ گئ۔۔ 

پینڈو؟؟ اسے سمجھ نہ آیا۔  

اب پینڈو کو انگریزی میں کیا کہیں گے۔۔ وہ بڑ بڑائی

نتھنگ۔۔ ذیادہ دماغ پر زور دینا اسے کبھی پسند نہیں رہا تھا۔۔ 

تم اگر چاہو تو اندر کمرے میں جا کر آرام کر لو۔۔ 

علی نے کہا تووہ چونکی

ساڑھے گیارہ بج رہے تھے یقینا یہ اسکے آرام کا وقت تھا۔ وہ شرمندہ ہو گئ  

آپ آرام کر لیں اپنے کمرے میں جا کر آرام سے میں بس موبائل چارج ہو جائے تو جانا چاہوں گی۔آپ میری وجہ سے اپنی نیند نہ خراب کریں۔ 

اسے خیال آیا ایک کمرے کے اپارٹمنٹ میں وہ یقینا اسکی وجہ سے بے آرام تھا۔۔ 

میں انسومینیا کا شکار ہوں میں سوتا نہیں ہوں۔ علی سادہ سے انداز میں بتاتا چائے کا خالی کپ رکھنے اوپن کچن میں چلا گیا۔۔ 

آپ کیا کرتے ہیں؟؟؟ اس کو خیال آیا۔۔ 

بزنس ماسٹرز ہوں۔ وہ مسکرایا   

ساتھ گیسٹ لیکچرر ہوں ایک اکیڈمی میں ساتھ ساتھ ایک ریستوران شروع کیا ہے جس میں حلال کورین  فوڈ پیش کی جاتی ہے۔۔ یہ جو ابھی اسٹیک کھایا ہے آپ نے خالصتا کوریائی ٹچ کے ساتھ میری ذاتی ترکیب سے بنا ہے۔۔

پھر تو آپکا ریستوران چلتا ہی نہیں ہوگا۔۔ 

اس نے جھٹ خیال ظاہر کیا

کیوں؟۔ وہ حیران ہوا۔۔ 

حلال فوڈ مسلمان ڈھونڈتے ہیں اور یہ ٹھہرا نان مسلم ملک۔۔ مانگ ہی نہیں ہوگی اس طرح کے کھانے کی۔۔

اس نے وجہ بھی بتادی۔۔ 

علی نے مسکرا کر نفی میں سر ہلایا وہ۔ کھانے کے برتن سمیٹ رہا تھا ساتھ ساتھ اس سے باتیں بھئ کر رہا تھا۔۔۔ 

ایسی بات نہیں ہے  خوب چلتا ہے۔دراصل۔ مسلمان حلال کے سوا نہیں کھاتے مگر نان مسلم کو تو حلال حرام سے فرق نہیں پڑتاوہ حلال فوڈ بھی کھا لیتے ہیں بلکہ ۔۔ میرے ریستوران میں تو اکثر وی لاگر حلال فوڈ کھانے آتے ہیں اور انکے ریمارکس پر میرے ریستوران پر کسٹمرز بھئ کافی بڑھے ہیں۔۔

اچھا بڑی بات ہے۔۔ اس نے کندھے اچکائے۔۔

ایک بار تو مجھے ایک کسٹمر نے آکر حلال پورک اسٹیک کی فرمائش بھئ کی۔۔

وہ ہنستے ہوئے بتانے لگا۔ 

اریزہ بھی ہنس پڑی۔۔اسکا موبائل جان پکڑنے لگا تھا۔ اس نے فورا بٹن دبا کر آن کردیا 

آپ سوچ رہی ہوں گی اسمیں ہنسنے کی کیا بات ۔۔ در اصل مسلمان پورک نہیں کھاتے۔ مکمل منع ہے انکیلئے پورک کھانا۔ حلال فوڈ سے مطلب کوئی نیا فلیور نہیں ہوتا بلکہ جانور کی گردن کی رگیں کاٹ کر اسکی جان لینا وہ بھی اسم الہی کے ساتھ۔۔ اسے حلال کرنا کہتے ہیں۔۔ 

اس نے تفصیلی جواب دیا تھا۔ 

میں جانتی ہوں۔۔ میں بھی۔۔ اریزہ نے  بتانا چاہا تبھئ اسکا موبائل بج اٹھا۔۔

اس نے آگے بڑھ کر نام دیکھا لکھا تھا

ہیون کالنگ۔۔ 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

آدھے گھنٹے میں وہ اسکے سامنے تھا۔

تم ٹھیک ہو،؟۔

وہ فکرمند تھا

بالکل۔ ان صا حب نے بہت خیال رکھا میرا۔اس کے کہنے پر ہیون کو خیال آیا

 شکریہ یار ۔۔

بیٹھو کافی پی لو۔۔۔ 

وہ محظوظ انداز میں اسے دیکھ رہا تھا۔

پریشان حال بکھرے بال جن پر برف بھی پڑی تھی۔ اتنا اجڑا پجڑا ہیون نامانوس تھا اسکیلیئے۔۔

نہیں۔ بس اب چلتے ہیں ہم۔ ہیون نے کہا تو اریزہ نے مڑ کر کوریائی انداز میں جھک کر آننیاگ واسے او کہا۔

علی نےاسے اسی کے انداز میں جواب دے کر ہیون کے کندھے پر ہاتھ رکھا اور جان کر ہنگل میں بولا۔

مجھے اندازہ ہوتا تو سب سے پہلے تمہیں اطلاع دیتا۔ پھر بھی تمہیں مجھ سے بات کرکےاطمینان ہوجانا چاہیئے تھا اتنی برفباری میں ڈرائیو کرکے یہاں آئےہو۔ یہ لڑکی دوست سے کچھ ذیادہ ہے ہے نا؟۔۔

اسکا انداز چھیڑنے والا تھا۔۔ 

ہیون جھینپ سا گیا۔۔ 

بہت ذیادہ۔۔ 

اس نے سچے دل سے کہا تھا۔۔ 

دونوں ہی ہنس دیئے۔۔ انکے ہنسنے پر اریزہ نے مڑکر 

دیکھا

فیس بک پر جانے کس صدی کی تصویر لگائی ہے اصل میں تو ٹھیک ٹھاک وجیہہ اور مہربان سا ہے۔۔۔

اس نے سوچا۔۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

تم مجھے کال کر لیتیں ۔۔ آج تو برفباری بھی یکدم سے بہت شدید شروع ہوگئ ہے۔۔ اسکیلئے دروازہ کھولتے ہوئے کہہ رہا تھا۔۔گاڑی میں بیٹھ کر اس نے سب سے پہلے ہیٹر آن کیا تھا۔۔ 

معزرت۔۔ وہ بس کہہ کر چپ ہوگئ۔۔ 

بندہ ویدر فارکاسٹ ہی دیکھ لیتا ہے۔گرم کپڑے پہن کر نکلتا ہے۔۔ ابھی سیول میں شدید سردی پڑنی شروع بھی نہیں ہوئئ۔۔ اوپر سے موبائل بند گوارا وہاں الگ پریشان ہو رہی ہے۔۔ ہم سب کو فکر یہ تھی کہ راستے نہیں یاد یہاں کے۔ہنگل بھی نہیں آتی تمہیں۔۔ کسی مصیبت میں نہ پھنس گئ ہو۔۔اور ہمارا اندازہ صحیح نکلا۔ چوٹ اندرونی ہے یا خون بھی نکلا؟

وہ یقینا کافی پریشان ہوا ہوگا جبھی نان اسٹاپ بولتا گیا۔۔ اسے اپنی غلطئ کا اندازہ تھا

نہیں خون نہیں نکلا۔ 

اس نے دھیمی آواز میں جواب دیا

 بہت قسمت اچھی تھی جو جون جے مل گیا۔۔ ایک تو رج کے شریف اوپر سے انگریزی بھی آتی ہے اسے۔۔۔ تم۔۔ 

بولتے بولتے اسکی نظر اریزہ پر پڑی تو یکدم چپ ہو رہا۔۔ وہ آنکھیں پونچھ رہی تھی۔ ۔ وہ چلا نہیں رہا تھا اسے عادت ہی نہیں تھی پھر جملے بھی سخت نہ تھے اسکا رو پڑنا غیر متوقع تھا۔۔ برفباری کی شدت میں کمی آچکی تھی۔اس نے راستے میں ایک۔طرف کرکے گاڑی روک دی۔۔  آنسو پونچھتے سر اٹھایا تو چونکی۔۔ مڑ کر ہیون کو دیکھنے لگی۔۔ 

وہ اسکے متوجہ ہونے کا ہی منتظر تھا۔۔ فورا معزرت کرنے لگا۔۔

بیانیئے۔ میں شائد زیادہ بول گیا۔۔ 

اریزہ چپ چاپ اسے دیکھتی گئ۔۔ اسکے چہرے پر فکر پریشانی خیال کیا کچھ نہ تھا اسکے لیئے۔۔ اسے تو لگا تھا یہاں اسے پوچھنے والا کوئی نہیں ہے جبکہ یہاں اسکیلئے پریشان ہونے والا دوست تھا فکر کرنے والی بہن جیسی گوارا بھی تھی۔۔اسکے اپنے دوست سہیلی جانے کہاں تھے کیا کر رہے تھے۔۔اسکی آنکھیں لبا لب بھر گئیں۔۔

نہیں تمہیں معزرت کرنے کی ضرورت نہیں۔

وہ اور شرمندہ ہوگئ

 بس وہ مجھے شرمندگی ہورہی ہے میری فالتو سی ضد کی وجہ سے تمہیں اتنی زحمت ہوئی  آئم سوری۔۔

برفباری سردی تنہائی کیسے انسان کو بےبس کرتی ہے وہ بخوبی جانتا تھا۔۔ وہ  اسی تکلیف میں مبتلا کسی اور کو سہارا دینے کو بڑھا۔۔ اریزہ نے اسی وقت رخ پھیر کر ڈیش بورڈ پر رکھے ٹشو باکس سے دھڑا دھڑ ٹشوز نکال کر آنسو پونچھ ڈالے۔۔ 

میں سوچ بھئ نہیں سکتی تھی برفباری دیکھنے کا شوق میرا ایسے تکلیف دہ انداز میں پورا ہوگا۔۔ 

وہ روانی میں چڑی چڑی سی بولی۔۔ 

ہیون کے چہرے پر مسکراہٹ در آئی۔ رخ پھیر کر گاڑی اسٹارٹ کرنے لگا۔۔

اریزہ کو یاد آئیں اپنی بڑکیں سینٹڈ نالہ برفباری ۔۔ اسے خفت سی محسوس ہوئی۔۔مگر مقابل ہیون تھا ایک لفظ بھی نہیں بولا تھا۔۔ 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

اریزہ۔۔

لپٹ کر کہہ رہی تھی۔۔۔یوآنہ کمرے سے اٹھ کر آئی تھی انہیں لائونج میں بخیریت دیکھ کر سر جھٹکتی واپس کمرے میں جا گھسی سر تک کمبل بھی تان لیا۔ 

تمہیں پتہ ہے کتنا پریشان تھی میں تمہارے لیئے۔۔ 

سوری۔۔ وہ اور کیا کہتی۔۔ 

اور یہ کیا پہن رکھا ہے۔ وہ اس سے دور ہو کر جائزہ لینے لگی۔۔ 

وہ یہ۔۔ اریزہ ایکدم سرخ پڑ گئ۔۔ 

برفباری سے کپڑے گیلے ہوگئے تھے تو جون جے نے اسے اپنے کپڑے دیئے تھے۔۔ ہیون کی جانب سے جواب آیا تھا۔۔ 

اور تم تم بھی لے لیتے جون جے سے کپڑے۔ یہ بوتھا کپڑے پہنے بیماری کو دعوت دے رہے ہو۔۔ سچ بتائو اریزہ یہ سڑک پر دیوانہ وار پکارتا تو نہیں پھر رہا تھا تمہیں جو اتنا بھیگا ہوا ہے۔

گوارا نے اسکو تادیبی نظروں سے دیکھتے بلا لحاظ تبصرہ جڑا تھا۔۔ ہیون ایکدم سرخ پڑا تھا تو یون بن نے منہ پھیر کر مسکراہٹ ضبط کی۔۔ اریزہ نے اب غور کیا تھا۔ اسکی جیکٹ بال سب گیلے تھے۔۔

ہاں تو تین اسپتالوں کے چکرلگائے پولیس اسٹیشن کا الگ دورہ کیا۔ میرے لیئے کوئی چھتری لیئے اوپا 

تھوڑی کھڑ ا ہوتا تھا۔۔ 

ہیون تیز ہو کر بولا تھا۔۔ خفت سے لال چہرے پر بگڑ کر بولتا اسکا بس نہیں تھا گوارا کو کچا چبا جائے۔۔ اریزہ کو بھی بے ساختہ ہنسی آگئ تھی جسے اس نے چھپانے کی کوشش نہ کی۔۔ یون بن  اپنے دوست کی مدد کو آیا۔

چلو میں اپنے کپڑے دوں تمہیں۔۔ یون بن اسے بازو سے پکڑ کر کھینچ لے گیا۔۔

یون بن ؟ اریزہ کا چہرہ سوالیہ نشان بنا۔۔ 

ہم میک اپ بریک اپ کرتے رہتے ہیں۔۔۔ گوارا ہنس دی 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

صبح مطلع صاف تھا۔۔دھوپ نکل آئی تھی۔۔ اسکے سوا سب گہری نیند میں تھے۔ وہ اپنے آپکو بالکل تازہ دم محسوس کر رہی تھی ۔۔ ساری رات اسے بالکل نیند نہ آئی جیسے ہی پو پھٹنے لگی احتیاط سے بیڈ سے اتری اور کمرے سے باہر نکل آئی۔ یون بن  اور ہیون لائونج میں بستر بچھائے بے خبر تھے۔۔ وہ باہر ٹیرس میں چلی آئی۔ سورج نکل رہا تھا۔ وہ بڑے غور سے اسے دیکھنے لگی۔۔  دھلا دھلایا سیول اور نکلتا ہوا نارنجئ سورج ۔۔ اس نے جھٹ تصویر کھینچی۔۔ 

ہر برفباری کے بعد ایک چمکیلا سورج منتظر ہوتا ہے۔ بس ضرورت اس بات کی ہوتی ہے کہ برفباری سہہ جائیں ۔۔ 

اس نے لکھ کر تصویر چڑھا دی۔۔ 

اسکے بلاگ پر اس وقت لوگ نہیں تھے۔۔ 

اس نے بور سا ہو کر بلاگ بند کر دیا۔ تبھی بلاگ کی اطلاعی گھنٹی بجی تھی۔۔

موسم باہر کے تو بدلتے رہتے ہیں اندر مگر کوئی موسم ٹھہر جائے توکیا کیا جائے۔۔ ؟؟؟

 علی۔۔۔۔ 

یہ۔اس وقت جاگ رہا ہے؟ واقعی انسومینیا ہے کیا اسے۔۔ 

اسے حیرت ہوئی تھی۔

میرے اندر کا موسم خود اداس سا ہے تمہیں کیا مشورہ دوں۔۔ 

اس نے گہری سانس لی۔۔ 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

یہ پہلی بار تھا کہ بلاگر نے اسکو جواب نہیں دیا تھا۔۔ علی چند لمحے انتظار کرتا رہا پھر موبائل بیڈ پر رکھتا بیڈ سے اٹھ کھڑا ہوا۔۔ 

 کمرے کی کھڑکی سے پردےہٹا کر نکلتے سورج کو 

دیکھنے لگا۔۔ سول کا سورج تصویر سے کہیں ذیادہ دلکش لگ رہا تھا۔۔

وہ کتنی ہی دیر ابھرتے سورج کو دیکھتا رہا۔۔ سورج کی نرم گرم سی دھوپ اسکے اندر جمی برف پگھلا نے لگی تھی مگر ابھی اسے احساس نہیں ہوا 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد۔ 

جاری ہے۔۔ 

kesi lagi apko salam korea ki yeh qist ? Rate us below

Rating
“>> » Home » Urdu Novels » Salam Korea » Salam Korea Episode 30

By Syeda Vaiza Zaidi

Vaiza Zaidi is a female writer who writes Urdu web novels online. She is one of the most popular and prolific writers in the Urdu literature scene. She has written over 50 novels in different genres, such as romance, thriller, comedy, and social issues. She has a large fan following who admire her for her creativity, style, and humor. She is also an active blogger who shares her views on various topics related to Urdu culture, literature, and society. She is an inspiring role model for many young and aspiring Urdu writers.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *