Online urdu novels, Online urdu romantic novels, Netflix Pakistan writers, Trending online novel, Trending netflix writers, Pakistani trending novel writers Vaiza zaidi, Urdu trending Pakistan, Pakistani online writers, Pakistani trending novels, top urdu novels, urdu novels pdf, hot and bold urdu novels pdf, extreme romantic urdu novels, top 10 best urdu novels, romantic novels in urdu pdf, dark romance urdu novels pdf, best pakistani novels urdu, romantic urdu novels, hot and bold urdu novels pdf, top urdu novels, extreme romantic urdu novels top 10 best urdu novels, dark romance urdu novels pdf, latest complete urdu novels, latest complete urdu novels pdf download, Salam korea , Urdu web travel novel,

پھرتیلی ہیروئن
جہنمیلا نے جھٹ پٹ قورمے کا پلاؤ تیار کیا ساتھ شامی کباب کا مصالحہ چولہے پہ رکھا دوسرے چولہے پہ دودھ چڑھا کے قورمہ تیار کیا اور فوراً ہی کوفتوں کے لئے بوٹیوں کو پیس کے قیمہ کیا اور پھر قیمہ جوڑ کے کوفتے نامی گول بوٹیاں بنائیں (جنھیں اسکے کزن نے کھا کے پھر قیمہ کر کے نکال دینا تھا)کوفتے بھی چڑھادئیےگئے جتنی دیر میں شیرخرمہ ٹھنڈا ہو کوفتے پلاؤ ،کباب کا مصالحہ تیار تھا اس نے سل کے ایک حصے پہ پودینے کی چٹنی، املی کی چٹنی ، ہرے دھنیے کی چٹنی اور رائتے کا مصالحہ پیسا اور دوسرے حصے پہ اسُی بٹّے کی مدد سے کبابوں کا مصالحہ پیسا ہرا مصالحہ (جواسُکی پھرتیلی ماں نے کاٹنے سے منع کردیا )تو وہ بھی خود کاٹا اور کباب بغیر ڈھکن والی ٹِرک کے محض ہتھیلی پہ گول کرکے بنائے اور فرائی کرکے ہاٹ پاٹ میں رکھ دئیے ٹائم دیکھا تو عید کی نماز میں ابھی بھی پندرہ منٹ باقی تھے اس نے جلدی سے مٹر ایسے سلیقے سے چھیلے کہ سارے مٹر کے دانے گول گول نکلے ۔۔۔ ان دانوں سے آلو مٹر کی سبزی تیار کی اور باقی بچے مٹر کے پیکٹ بنا کے فریز کئے چکن تکہ کڑاہی اور چکن جنجر وہ کاموں کے بیچ رات ہی بنا کے رکھ چکی تھی۔۔ اور اس بیچ اپنی چہیتی مُرغی کے انڈے کو اپنی ماں کے مرغے کی مرغی کی تشریف کے نیچے رکھنا نہیں بھولی تھی( وصیت جو پوری کرنی تھی) اوفففففففوووواس افراتفری خوشی و دکھ میں وہ بھول ہی گئی کہ اسُ کے کزن کو سوکھے دودھ کا حلوہ بہت پسند ہے اب وہ پھر طبیلے بھاگی ، بھینس کے آگے اپنا دوپٹہ ڈال دیا ، اس کے ہاتھ پاؤں جوڑ منت سماجت کرکے اسُ سے “سوکھا دودھ “نکلوایا بھینس کی بے وقت مدد اور اسکی “ایکسٹرا ایفرٹ “پہ اسکا شکریہ ادا کیا اور جلدی سے سوکھے دودھ کا حلوہ تیار کرکے اوپر بادام پستے کی ہوائیاں چھڑک کے چاندی کے ورق ( جو اس نے اپنی ماں کے جہیز کے چاندی کے سیٹ سے بنائے تھے ) سجادئیے۔۔۔ اوہ خُدا۔۔۔
عید کی نماز میں ابھی پانچ منٹ باقی تھے اور وہ بھُلکڑ ویلکم “ ڈرنک “ تیار کرنا تو بھول ہی گئی ۔۔۔
وہ برف لینے جلدی سے دوڑی دوڑی پڑوس میں پنہچی اور جُمن خالہ کو آوازیں دینے لگی ، خالہ جو بیچاری گھُٹنوں کے درد سے تڑپ رہی تھیں جہنمیلا کو دیکھ کر رونے لگیں اور جہنمیلا پلک جھپکتے میں سمجھ گئی کہ ان کی میسنی بہو نے پھر خالہ کے دماغ یعنی گھٹنوں کی مالش نہیں کی اس نے فٹا فٹ انجیر کے درخت سے زیتون توڑے ، کولہو میں زیتون ڈال کے ، سانڈے کا تیل نکالا اور اس تیل سے خالہ کے گھٹنوں کی مالش کرکے ان سے جھولی بھر دعائیں سمیٹیں ، اور خالہ کی اجازت سے برف لیکر گھر لوٹی تو مسجدوں سے عید کی نماز کی اللّہ اکبر سنائی دینے لگی اس نے جلدی سے اپنے ہاتھوں سے اگائے امرود کے درخت سے سیب توڑ کے “لیمن سوڈا “ خوب ساری برف ڈال کے تیار کیا تاکہ ٹھنڈا پی کے اسکے محبوب کے معدے میں اور اسکے معدے کی ٹھنڈ سے جہنمیلا کے کلیجے میں ٹھنڈ ا ٹھنڈا کُول کُول ہوجائے، اس نے خدا کے حضور سجدہ شُکر ادا کیا کہ اسکے پاس تیار ہونے کے لئے ابھی بھی بہت وقت باقی تھا۔۔۔


تحریر : جیا علی

Kesi lagi apko Phurteeli Heroin ki yeh qist? Rate us below

Rating
“>> » Home » Urdu Novels » Phurteeli Heroin » The Impactful Journey of the Heroine in Urdu Novel Phurteeli Heroin Episode 4

By Syeda Vaiza Zaidi

Vaiza Zaidi is a female writer who writes Urdu web novels online. She is one of the most popular and prolific writers in the Urdu literature scene. She has written over 50 novels in different genres, such as romance, thriller, comedy, and social issues. She has a large fan following who admire her for her creativity, style, and humor. She is also an active blogger who shares her views on various topics related to Urdu culture, literature, and society. She is an inspiring role model for many young and aspiring Urdu writers.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *